محکمہ ایکسائزنے رواں مالی سال میں 4ارب روپے سے زائدریونیو اکٹھا کر لیا

محکمہ ایکسائزنے رواں مالی سال میں 4ارب روپے سے زائدریونیو اکٹھا کر لیا

  

لاہور(نیوزرپورٹر) محکمہ ایکسائزانیڈٹیکسیشن پنجاب نے پراپرٹی ٹیکس، پروفیشنل ٹیکس،ٹوکن ٹیکس، موٹر وہکلز رجسٹریشن،اورایکسائزڈیوٹی ٹیکس کی مد میں ماہ فروری تک 4ارب37کڑورروپے کا ریونیو اکٹھا کر لیاہے جو گزشتہ سال کی نسبت سے 1 ارب روپے زیادہ ہے۔محکمہ ایکسائز اینڈٹیکسیشن پنجاب کے جنرل ڈائریکٹر اکرم اشرف گوندل کی ہدایات کے مطابق صوبہ بھر کی طرح صوبائی دارالحکومت لاہور میں ایکسائز کا سالانہ ریونیوٹارگٹ پورہ کرنے کے لیے تمام ریجن کے ڈائریکٹرز نے ریونیو اکٹھا کرنے کے عمل کو تیز کردیاہے۔ڈائریکٹر ریجن(اے )رضوان اکرم شیروانی کا کہناہے کہ ڈی جی ایکسائزکے حکم کے مطابق تمام ای ٹی اوز،اے ٹی اوزاور انسپکٹرز کو ہدایات دی گئیں ہیں کہ وہ پراپرٹی ٹیکس اور پروفیشنل ٹیکس کی ریکوری کوجلداز جلد ممکن بنائیں ٹیکس نادہندگان اورڈیفالٹرز کے خلاف چھاپے مارکر اورر تمام تر قانونی کاروائی کے زریعے ٹیکس ریکوری کو حاصل کیا جائے۔ڈائریکٹر موٹررجسٹریشن چوہدری محمد سہیل ارشد نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ لاہور موٹرجسٹریشن برانچ نے ایم آر اے ، محمد نعیم ،عدیل امجد،جاوید نیاز ی ،چوہدری قربان شاہد کی سخت محنت اور کاوشوں کی وجہ سے ٹوکن ٹیکس،نیورجسٹریشن،بوگس نمبر پلیٹس کی مد میں70 فیصد ریکوری مکمل کر لی ہے جو گزشتہ سال کی نسبت14 فیصد زیادہ ہے جو محکمہ ایکسائز کے لیے خوش آئند بات ہے۔ڈائریکٹرجنرل ایکسائز انیڈٹیکسیشن پنجاب اکرم اشرف گوندل کا کہناہے کہ ایکسائز کے ریجن لاہور نے اپنے سالانہ ٹارگٹ میں سے70فیصد ریکوری مکمل کرلی ہے اور باقی ماندہ ریکوری کو بھی بہت جلد مکمل کرلیا جائے گا۔ ان کامزید کہناہے کہ پراپرٹی ٹیکس،پروفیشنل ٹیکس اورٹوکن ٹیکس کی ریکوری کیلئے متعلقہ ٹیمیں پورے شہر میں چھاپے مار رہی ہیں اور کئی بااثرافراد کی غیر قانونی اورڈیفالٹرز جائیدادیں فروخت کی جاچکی ہیں اورموٹررجسٹریشن برانچ کو بھی ہدایات جاری کی گئیں ہیں کہ وہ سڑک پر کسی بھی صورت چوری شدہ،ڈیفالٹراور نان رجسٹرڈ گاڑیوں کو چلنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

مزید :

صفحہ آخر -