سوئی گیس کے عارضی ملازمین کا تنخواہیں نہ ملنے پرمظاہرہ

سوئی گیس کے عارضی ملازمین کا تنخواہیں نہ ملنے پرمظاہرہ

  

لاہور(خبر نگار) سوئی گیس کمپنی کے عارضی ملازمین نے تنخواہیں نہ ملنے پر گزشتہ روز احتجاج کیا اور سوئی گیس کمپنی کے ریجنل آفس سمیت سب دفاتر میں سرکاری امور کا مکمل بائیکاٹ کر کے گیس کمپنی کے دفاتر کے سامنے دن بھر دھرنے دیئے، گلبرگ میں واقع ریجنل آفس کے سامنے گیس کمپنی کے عارضی ملازمین نے دھرنا دیا، اس موقع پر سوئی گیس کمپنی کے عارضی ملازمین کا کہنا تھا کہ انہیں ٹھیکیدار کے ذریعے تنخواہ دی جاتی ہے اور ٹھیکیدار محکمہ سوئی گیس کے تنخواہوں کا چیک وصول کر لیتا ہے ، لیکن ملازمین کو ہر ماہ 15سے20روز تک تاخیر سے تنخواہ نہیں دی جاتی ہے، ہر ماہ تنخواہ کے لئے دھکے کھانے پڑتے ہیں، دوسری جانب ملازمین کی ہڑتال اور احتجاج کے باعث سوئی گیس کمپنی کی ایمرجنسی اور مینٹینس کی ٹیمیں فیلڈ ورک کیلئے روانہ نہیں ہو سکی ہے جس کے باعث سوئی گیس کے صارفین گیس کمپنی کے دفاتر اور ایمرجنسی سیل کے نمبروں پر شکایات درج کرواتے رہے ہیں سوئی گیس کمپنی کے ورک چارج ملازمین کا کہنا تھا کہ ایم ڈی سوئی گیس کمپنی نے نوٹس نہ لیا تو احتجاج کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا۔ اس حوالے سے سوئی گیس کمپنی کے کنٹریکٹرز کا کہنا ہے گیس کمپنی کے حکام نے ان کے چیک روک رکھے ہیں، جس کی بنا پر تنخواہیں تاخیر کا شکار ہو گئی ہیں، جبکہ گیس ترجمان کا کہنا ہے کہ ٹھیکیداروں کے بل دیئے جا رہے ہیں جلد مسئلہ کو حل کر لیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ آخر -