مردانہ کمزوری کی اہم مگر متنازع ترین وجہ تحقیق میں سامنے آ گئی

مردانہ کمزوری کی اہم مگر متنازع ترین وجہ تحقیق میں سامنے آ گئی
مردانہ کمزوری کی اہم مگر متنازع ترین وجہ تحقیق میں سامنے آ گئی

  

پراگ (نیوز ڈیسک) نامردی ایک ایسا مسئلہ ہے جو کسی بھی مرد کو جیتے جی مار سکتا ہے۔ جمہوریہ چیک کے سائنسدانوں نے اس دردناک مسئلے کے بارے میں انتہائی اہم تحقیق کی ہے جس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ نامردی کا تعلق بڑی حد تک بچپن کے مسائل سے ہے۔

بچے کی ڈلیوری کے دوران ماں بننے والی نوجوان لڑکی کا ایسا اقدام کہ انٹرنیٹ پر ہنگامہ برپاہوگیا، تصاویر بھی جاری کردیں

 چارلس یونیورسٹی کے نفسیات دانوں نے 15 سے 88 سال عمر کے 960 مردوں کے جنسی مسائل اور ان کے بچپن میں پیش آنے والے تجربات کا مطالعہ کیا۔ جب سرعت انزال اور ازدواجی تعلق استوار کرنے میں مکمل ناکامی کا مطالعہ کیا گیا تو معلوم ہوا کہ ان کے شکار افراد بچپن میں جذباتی مسائل کا شکار رہے جن میں قریبی افراد اور خصوصاً والدہ کے ساتھ عدم تحفظ اور بے یقینی کا تعلق اور خصوصاً پیار سے محرومی سرفہرست تھے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ جو مرد اپنے بچپن میں ان نفسیاتی اور جذباتی مسائل سے گزرتے ہیں ان کے دماغ میں بے یقینی، خوداعتمادی میں کمی اور کمزوری کے تاثرات ثبت ہو جاتے ہیں اور جب یہی بچے جوان ہوتے ہیں تو صنف مخالف کی قربت کے دوران ان کا ذہن منتشر اور متزلزل رہتا ہے اور وہ کلی یا جزوی نامردی کا شکار ہو جاتے ہیں۔

خبریں چپکے سے اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔

گزشتہ سال ہونیوالی اس تحقیق میں شامل  ماہرین کا کہنا ہے کہ اس تکلیف سے بچنے کیلئے ضروری ہے کہ والدین اور خصوصاً والدہ کی طرف سے بچے کو بھرپور شفقت، پیار اورتحفظ ملے اور اس کی تربیت ایک صحت مند اور محفوظ ماحول میں ہو۔ جو مرد اس مسئلے کا شکار ہیں وہ بھی ناامید ہوئے بغیر کسی اچھے نفسیات دان سے رابطہ کریں کیونکہ مناسب توجہ ملنے پر وہ باآسانی ایک بھرپور مرد کی زندگی گزار سکتے ہیں۔ یہ تحقیق رواں سال  جنوری میں سائنسی جریدے "Sexual Medicine" میں شائع کی گئی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -