پاکستان کڈنی اینڈلیور انسٹیٹیوٹ سینٹر میں کورونا وائرس سٹاف کی ٹریننگ

  پاکستان کڈنی اینڈلیور انسٹیٹیوٹ سینٹر میں کورونا وائرس سٹاف کی ٹریننگ

  



لاہور(سٹی رپورٹر)پاکستان کڈنی اینڈلیور انسٹیٹیوٹ اینڈ ریسرچ سینٹر میں ہیلتھ کیئر پروفیشنلز کیلئے کورونا وائرس کے مریضوں کی صحت میں ایمرجنسی یا شدید پیچیدہ صورتحال میں دیکھ بھال کے حوالے سے ٹریننگ سیشن کا انعقاد ہوا۔ شرکاء میں گنگا رام، میو، سروسز اور لاہور چلڈرن ہسپتال کے 150سے زائد ڈاکٹرز، نرسنگ اور پیرا میڈیکل سٹاف نے تربیت حاصل کی۔چیئرمین بورڈ آف گورنرز پی کے ایل آئی پروفیسر ڈاکٹر جاوید رضا گردیزی نے تربیت پر آئے شرکاء کا استقبال کیا اور اپنے خطاب میں وبائی امراض سے پیدا ہونے والی ایمرجنسی صورتحال میں صحت کے پیشہ ور افراد کے کردارپر نمایاں روشنی ڈالی۔ پی کے ایل آئی کے ڈین پروفیسر ڈاکٹر حافظ اعجاز احمد نے شرکاء کو تربیتی کورس کا مقصد متعارف کروایا۔ مزید براں، کنگ ایڈورڈ یونیورسٹی کے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر آصف حنیف نے شرکاء کو مختلف تشخیصی نمونوں کو حاصل کرنے اورلیبارٹری میں مناسب طریقہ سے ہینڈل کرنے کے بارے میں آگاہی دی۔

انہوں نے یہ بھی بتایا کہ کیسے صحت کی دیکھ بھال کرنے والے اہلکار انفیکشن کی روک تھام اور کنٹرول کے طریقوں پرعمل پیرا ہوکر مریضوں کی دیکھ بھال کرتے وقت اپنی حفاظت کرسکتے ہیں۔ جس میں ذاتی حفاظتی سازوسامان (پی پی ای) کا مناسب استعمال بھی شامل ہے۔تربیتی کورس کیلئے آنے والے شرکاء نے ٹریننگ سیشن کروانے پر ہسپتال کے کردار کو سراہا اور پی کے ایل آئی انتظامیہ نے پاکستان میں صحت کی دیکھ بھال کی فراہمی کو مستحکم بنانے کیلئے اس طرح کے آگاہی سیشن اور ورکشاپس جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا۔

سٹاف کی ٹریننگ

مزید : میٹروپولیٹن 1