’ہم حالت جنگ میں ہیں،برطانیہ یورپی ضوابط پر عمل کرے ورنہ۔۔۔‘فرانس کھل کر سامنے آگیا

’ہم حالت جنگ میں ہیں،برطانیہ یورپی ضوابط پر عمل کرے ورنہ۔۔۔‘فرانس کھل کر ...
’ہم حالت جنگ میں ہیں،برطانیہ یورپی ضوابط پر عمل کرے ورنہ۔۔۔‘فرانس کھل کر سامنے آگیا

  



پیرس(ڈیلی پاکستان آن لائن)فرانس کوروناوائرس کے خلاف کارروائیوں میں برطانیہ کے خلاف کھل کر سامنے آگیا۔فرانسیسی وزیراعظم ایڈورڈ فلپ کہتے ہیں کہ اگربرطانوی حکومت نے کوروناوائرس کے حوالے سے یورپی یونین کے ضوابط پر عملدرآمد نہ کیاتو تمام برطانوی شہریوں کا یورپ میں داخلہ بند کردیںگے۔اپنے ٹی وی خطاب میں فرانسیسی وزیراعظم نے مزید کہا کہ برطانیہ اس کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں پیچھے ہے۔

دوسری جانب فرانسیسی صدر عمانویل میکخواں نے ملک بھر میں لاک ڈاون کااعلان کرتے ہوئے فرانسیسی باشندوں کو پندرہ دنوں تک گھروں میں رہنے کا حکم دے دیا۔فرانسیسی صدر کہتے ہیں کہ ’ہم حالت جنگ میں ہیں۔ملک بھر میں لاک ڈاون کو یقینی بنانے کیلئے ایک لاکھ پولیس اہلکار تعینات کئے جائیں گے‘۔انہوں نے کہا یہ پولیس اہلکار گھروں کے باہر تعینات رہیں گے اوپندرہ دنوں تک ر لوگوں کو اشیائے ضروریہ کی خریداری میں مدد فراہم کریں گے۔انہوں نے کہا کہ فرانسیسی فوج ملک بھر میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی منتقلی کی ذمہ داریاں سنبھالے گی اور جہاں ضرورت ہوئی مریض کو ایک جگہ سے دوسر ی جگہ منتقل کرے گی۔انہوں نے ملک بھر کی تمام صنعتوں کی لامحدود مالی معاونت کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کوئی کمپنی چاہے وہ کتنی ہی بڑی یا چھوٹی ہو اسے دیوالیہ نہیں ہونے دیاجائے گا۔

واضح رہے کہ فرانس بھر میں اب تک 148افراد کورونا وائرس کی وجہ سے ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد6664ہوگئی ہے۔

مزید : بین الاقوامی