صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا چیئرمین پاکستان علماکونسل حافظ محمد طاہر محمود اشرفی سے رابطہ

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا چیئرمین پاکستان علماکونسل حافظ محمد طاہر محمود ...
صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا چیئرمین پاکستان علماکونسل حافظ محمد طاہر محمود اشرفی سے رابطہ

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے چیئرمین پاکستان علما کونسل و صدر وفاق المساجد و المدارس پاکستان حافظ محمد طاہر محمود اشرفی سے فون پر رابطہ کیا۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کرونا وائرس پر قابو پانے کے لیے علما و مشائخ کے فعال کردار ادا کرنے پر شکریہ ادا کیا اور کہا کہ کرونا وائرس پر باہمی اتحاد سے ہی قابو پائیں گے۔ چین سے ملنے والی معلومات کے تناظر میں آئندہ لائحہ عمل بنا رہے ہیں۔ علما و مشائخ نے عوام کی رہنمائی کیلئے انتہائی فعال کردار ادا کیا ہے اور مزید ادا کرنا ہوگا۔صدر مملکت نے مساجد میں نماز اور جمعة المبارک کے اجتماعات فرش پر ادا کرنے کی تجویز کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ کرونا وائرس کے خاتمے کے لیے پاکستان علماکونسل اور دیگر تنظیموں کی کوششیںمثبت ہیں، علماو مشائخ ، عوام الناس کو احتیاطی تدابیر سے آگاہی میں مدد کریں۔چیئرمین پاکستان علما کونسل حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے صدر مملکت سے گفتگو میں کہا کہ علماو مشائخ کرونا وائرس کے خاتمے کیلئے حکومت کے شانہ بشانہ ہیں۔تمام مکاتب فکر کے علماو مشائخ عوام الناس کو احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کی تلقین کر رہے ہیں۔ملک بھر کی مساجد میں تمام احتیاطی تدابیر پر عمل ہو رہا ہے ، حکومت کی مشاورت سے مدارس کو بند کر دیا گیا ہے۔ کرونا ایسی وباکے خاتمے کے لیے ہمیں ہر قسم کے اختلافات سے بالا تر ہو کر جدوجہد کرنی چاہیے۔دریں اثنا چیئرمین پاکستان علما کونسل اور صدر وفاق المساجد و المدارس پاکستان حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے ذرائع ابلاغ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مساجد میں احتیاطی تدابیر پر مکمل عمل ہورہا ہے جمعةالمبارک کے اجتماعات احتیاطی تدابیر اور وزارت صحت کی ہدایات کی روشنی میں منظم کیے جائیں گے۔ مساجد بند کرنے کی افواہیں پھیلا کر ملک میں انتشار پیدا کرنے کی کوشش نہ کی جائے۔ کرونا وائرس کی صورتحال پر حکومت اور تمام مکاتب فکر کے علما و مشائخ رابطے میں ہیں۔ کرونا وبا کے خاتمے کے لیے تمام پاکستانی شانہ بشانہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر کے علماو مشائخ باہمی رابطہ میں ہیں۔ وزارت صحت کی ہدایات کے مطابق مساجد میں نماز جمعة المبارک کے اجتماعات کے انتظامات کیے جارہے ہیں۔ مساجد کو بند کرنے کی افواہیں پھیلانے والے ملک میں انتشار چاہتے ہیں۔ کرونا وائرس کا مقابلہ باہمی اتحاد سے کرنا ہے۔ عوام الناس کو رجوع الی اللہ کرنا ہے۔ احتیاطی تدابیر تو کل علی اللہ کے خلاف نہیں ہیں۔ جمعة المبارک میں خطبات مختصر ہوںگے اور عوام کی آسانی کے لیے مساجد کے صحن میں نماز وں کا اہتمام کیا جائے گا۔ صفوں کے درمیان فاصلہ رکھا جائےگااورہر نماز کی ادائیگی سے قبل سرف یا صابن سے فرش کو دھونے کی تلقین کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ نمازی سنتیں گھر میں ادا کر کے آئیں اور نماز کے بعد کی سنتیں بھی گھر میں ادا کریں، عوام الناس سےوزارت صحت کی طرف سے ملنے والی ہدایات پر مکمل عمل کی تلقین کی جائے۔انہوں نے کہا کہ علماو مشائخ نے ملک بھر میں عوام الناس سے اپیل کی ہے کہ مریض ، بزرگ حضرات مساجد کے بجائے اگر گھر میں نماز ادا کریں تو بہتر ہو گا۔مساجد میں وضو خانوں اور طہارت خانوں کی مکمل صفائی کا خیال رکھا جارہا ہے۔ اس ناگہانی صورتحال کا مقابلہ کرنے کے لیے منبر و محراب اپنا کردار نہایت ذمہ داری کے ساتھ ادا کررہے ہیں۔پاکستان علماکونسل ،وفاق المساجد و المدارس پاکستان کے تحت مساجد میں صابن ، سینی ٹائزر اور صفائی کی دیگر اشیائے ضروریہ کا اہتمام کیا جارہا ہے۔ مخیر حضرات بھی اس کار خیر میں حصہ لیں اور عوامی مقاماتبالخصوص مساجد میں صفائی سے متعلق اشیائے ضروریہ مہیا کرنے کی اس مہم میں پاکستان علما کونسل کے معاون بنیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کرونا وائرس کے کیسز تیزی سے بڑھ رہے ہیں، اس ناگہانی صورتحال کا مقابلہ کرنے اور کرونا وائرس کے خاتمے کے لیے پوری قوم کو عزم و ہمت کے ساتھ اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ افواہیں پھیلانے والوں پر نظر رکھیںاور بغیر تحقیق کے کسی خبر کو نہ پھیلائیں۔ پوری قوم رجوع الی اللہ کرے، استغفار ، آیت کریمہ ، سورہ فاتحہ و خلاص کا ذکر ہر جگہ پر کیا جائے۔

مزید : قومی