کپاس کے کاشتی ہدف میں کوتاہی برتنے والے افسران کےخلاف کارروائی ہوگی

کپاس کے کاشتی ہدف میں کوتاہی برتنے والے افسران کےخلاف کارروائی ہوگی

راولپنڈی(اے پی پی) سیکرٹری زراعت پنجاب علی طاہر نے کہاہے کہ کپاس کی کاشت کے ہدف کے حصول میں کوتاہی برتنے والے افسران کے خلاف کارروائی کی جائے گی اور اس ضمن میں افسران و عملے کی کسی قسم کی غفلت برداشت نہیں کی جائے گی۔یہاں ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے علی طاہر نے کہا کہ 6 ملین ایکڑ رقبہ پر کپاس کی کاشت کا ہدف حاصل کر لیا جائے گا ۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ سال 2014-15 کے لئے 6 ملین ایکڑ رقبہ کپاس کے زیر کاشت لانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے جبکہ پیداوار کا ہدف 10.5 ملین گانٹھ مقرر کیا گیا ہے ۔ اجلاس میں مزید بتایا گیا کہ پنجاب میں سال 2013-14 کے دوران 5.434 ملین ایکڑ رقبہ کپاس کے زیر کاشت لایا گیا جس سے 9.145 ملین گانٹھ پیداوار حاصل ہوئی۔2013-14 میں کپاس کی 23 من فی ایکڑ پیداوار کے مقابلہ میں 2014-15 میں 23.91 من فی ایکڑ پیداوار حاصل کرنے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔

 سیکرٹری زراعت نے اس موقع پرجنوبی پنجاب میں آموں کے باغات سے پھل کی مکھی کے تدارک کےلئے محکمہ زراعت پنجاب کی جاری مہم کا جائزہ بھی لیا ۔سیکرٹری زراعت پنجاب نے کہا کہ پھل کی مکھی کے تدارک سے آم کی برآمد میں اضافہ اور ملک کے لئے زیادہ زرمبادلہ حاصل کیا جا سکتا ہے اس لئے تمام سٹیک ہولڈرز کو اس مہم میں فعال کردار ادا کرنا ہو گا۔ اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل زراعت توسیع ڈاکٹر انجم علی نے بتایا کہ اس وقت پنجاب میں 80 فیصد گندم کی تھریشنگ مکمل ہو چکی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ حالیہ سروے کے مطابق اب تک 13 لاکھ ایکڑ رقبہ پر کپاس کی کاشت مکمل ہو چکی ہے ۔

مزید : کامرس