والٹن ایئر پورٹ ختم کر کے پلازے بنانا ریاستی دہشتگردی ہے،فیصل نوید

والٹن ایئر پورٹ ختم کر کے پلازے بنانا ریاستی دہشتگردی ہے،فیصل نوید

لاہور (پ ر)سیو والٹن‘ سیو ایوی ایشن تحریک کے ارکان نے پریس کانفرنس میں کہا ہے کہ حکومت پنجاب نے اربوں روپے کمانے کی غرض سے ایک منصوبہ تشکیل دیا ہے جس کے تحت پاکستان کے قومی ورثے اور تحریک پاکستان کے حصے والٹن ایئرپورٹ لاہور کو ختم کر کے اس کی زمین پر بلند پلازے اور تجارتی مراکز بنائے جائیں گے۔ انہوں نے والٹن کی تاریخی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ والٹن ایئرپورٹ 93 سال سے قائم شہری ہوابازی کے شعبے کی ایک عظیم درسگاہ ہے جو قائداعظم کی یادگار اور تحریک پاکستان کا سرگرم حصہ ہونے کے باعث پاکستان کا قومی ورثہ ہے۔ اسے ختم کر کے اس جگہ پر کمرشل زون بنانے کا منصوبہ ”ریاستی دہشت گردی“ کی بدترین مثال ہے فیصل نوید آصف نے کہا کہ والٹن ایئرپورٹ پاکستان کا سرمایہ افتخار ہے۔ یہاں پر قائداعظم اپنے طیارے میں آیا کرتے تھے اور اُن کا طیارہ ان کے لئے مخصوص ایک ہینگر میں کھڑا رہتا تھا۔ کیپٹن مجتبیٰ ساجد نے کہا کہ والٹن ایئرپورٹ وہ واحد مقام ہے جہاں فلائنگ کلب کے علاوہ سول شعبہ میں طیارہ سازی کی صنعت قائم ہے اور ایک ادارہ عالمی معیار کے مطابق تربیتی جہاز تیار کر رہا ہے۔ اگر والٹن کو بند کر دیا گیا تو پاکستان سے طیارہ سازی کی انڈسٹری ختم ہو جائے گی۔ڈاکٹر لیاقت سعید نے کہا کہ والٹن ایئرپورٹ پاکستان میں ہوابازوں کی تربیت کے لئے ریڑھ کی ہڈی کا مقام رکھتا ہے لہٰذا ہم سب مل کر اس کا پوری طرح دفاع کریں گے۔انہوں نے پُرزور الفاظ میں وزیراعظم پاکستان میاں محمد نوازشریف سے مطالبہ کیا کہ ملکی تاریخ کے حامل اس ورثے کی حفاظت فرمائیں۔ اس کے قائم رکھنے کے لئے ذاتی طور پر دلچسپی لیتے ہوئے احکامات صادر فرمائیں نیز ان افراد کے خلاف ایکشن کا حکم صادر فرمائیں جو مالی منفعت کی تصویر دکھا کر اسے ختم کر دینا چاہتے ہیں۔ ڈاکٹر لیاقت سعید نےبھی خطاب کیا

مزید : میٹروپولیٹن 4