مودی مسلمانوں سے ”محبت “کریں ،بھارتی میڈیا

مودی مسلمانوں سے ”محبت “کریں ،بھارتی میڈیا

نئی دہلی ( مانیٹرنگ ڈیسک) ہندوستان میں مسلم کش شناخت رکھنے والے نامزد وزیراعظم نریندر مودی کو بھارتی اخبارات نے فتنے کی سوچ ختم کرنے کامشورہ ور مسلمانوں کی دل جوئی کی تجویز پش کردی ہے ۔ گجرات میں نریندرا مودی کی وزارتِ اعلیٰ کے دور میں ہندو مسلم فسادات میں ایک ہزار سے زائد مسلمانوں کی ہلاکتیں ہوئی تھیں اور نریندرا مودی کو ان کا ذمہ دار قراردیا جاتا رہا ہے ۔غیرملکی خبر ایجنسی کے مطابق بھارتی اخبارات نے نریندرا مودی سے کہا ہے کہ وہ حقیقت پسندی اختیار کریں اور بھارت میں بسنے والی اقلیتوں خاص طور پر مسلمانوں کے مسائل حل اور عدام اعتماد کی فضا ختم کریں جبکہ ان کی شناخت ہندو قوم پرست کی حیثیت سے جنہوں نے بھارتی الیکشن میں تیس سال کے بعد اس قدر واضح اکثریت حاصل کی ہے ۔وزیراعظم کی حیثیت سے نریندرا مودی کو تمام اقلیتوں کو آئین و قانون کے مطابق یکساں شہری کے سٹیٹس کی فراہمی یقینی بنانا ہوگی ۔ اور اس آئینے میں کوئی دھبہ بھی نہیں ہونا چاہئے ۔ایک اخبار کے ادارے میں کہا گیا ہے کہ نریندرا مودی کو سب سے پہلے اس مسلم کمیونٹی سے رابطہ اور بات چیت کرنا چاہئے جس نے انہیں ووٹ نہیں دیا کیونکہ وہ انہیں نظر انداز کرنے کے متحمل نہیں ہوسکتے ۔ واضح رہے کہ بھارتی اخبارات نے اس بات کی خاص طور پر نشاندہی کی ہے کہ بھارت میں صرف 24ارکان منتخب ہوسکے ہیں جو 1952 ءکے بعد سے اب تک سب سے کم ترین تعداد ہے ۔

مزید : صفحہ اول