نیو دہلی، مجبور بیمار کا علاج کرانے سے انکار

نیو دہلی، مجبور بیمار کا علاج کرانے سے انکار

نیودہلی (نیوز ڈیسک) بھارت میں بہت ناک چہرے والے ایک بھکاری نے اپنے چہرے کا علاج کروانے سے انکار کردیا ہے کیونکہ اسے اس کے چہرے کی خوفناک بدصورتی کی بدولت ہی بھیک ملتی ہے اور وہ اپنی بیٹی کی شادی کیلئے پیسے اکٹھے کرنے کیلئے ابھی بھیک مانگنے پر مجبور ہے۔ دہلی سے تعلق رکھنے والا منان مونڈل نیوروفائبروماٹوسس نامی بیماری کا شکار ہے جس کی وجہ سے اس کا چہرہ بری طرح بگڑ چکا ہے اور گوشت ابنارمل اضافے کے بعد لٹک گیا ہے اور اس میں رسولیاں بننے کا بھی شدید خطرہ پایا جاتا ہے۔ اس بیماری کی وجہ سے اس کی ایک آنکھ، ایک کان اور متعدد دانت بھی ضائع ہوچکے ہیں، بھارتی شہر گرگاﺅں میں واقع ”فورٹس میموریل ریسرچ انسٹی ٹیوٹ“ کے ڈاکٹر اجے کی طرف سے تفصیلی معائنے کے بعد جب منان کو اس کی دردناک بیماری کے علاج کی آفر کی گئی تو اس نے یہ کہہ کر انکار کردیا کہ اس سے اس کا بھیک مانگنے کا کام متاثر ہوگا۔ اس نے بتایا کہ وہ اپنی 20 سالہ بیٹی رشیدہ کی شادی کرنا چاہتا ہے اور اسے جہیز دینے کیلئے اسے ڈھیروں پیسے چاہئیے ہیں۔ لہٰذا اس نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ نئے چہرے اور نئی زندگی کی بجائے اپنی بیٹی کیلئے بھیک مانگنا جاری رکھے گا۔

مزید : صفحہ آخر