پھٹے کپڑوں کو پیوند لگانے کے جاپانی طریقے،سوراخ کا نام و نشان بھی باقی نہ رہے

پھٹے کپڑوں کو پیوند لگانے کے جاپانی طریقے،سوراخ کا نام و نشان بھی باقی نہ رہے
پھٹے کپڑوں کو پیوند لگانے کے جاپانی طریقے،سوراخ کا نام و نشان بھی باقی نہ رہے

  

ٹوکیو (نیوز ڈیسک) قیمتی لباس میں ننھا سا سوراخ بھی ہوجائے تو مہنگے لباس کے ضائع ہونے کا خدشہ پیدا ہوجاتا ہے۔ اگرچہ اس مسئلے کے حل کے لئے رفو کی سہولت دستیاب ہوسکتی ہے لیکن اگر سوراخ اس طرح سے پر ہوجائے کہ کپڑا نیا لگنے لگے تو اس سے اچھی بات کیا ہوسکتی ہے۔ جاپانی رفو کا طریقہ Kaketsugi ایک ایسا ہی جادوئی عمل ہے جو کپڑے کے سوراخ کو یوں غائب کردیتا ہے گویا یہ تھا ہی نہیں۔

مزیدپڑھیں:چین پھر بازی لے گیا ،جرائم کے خاتمے کیلئے زبر دست منصوبے کا اعلان کر دیا،پاکستان کو بھی راستہ دکھا دیا

تہتر سالہ جاپانی ماہر ٹکاﺅ ماٹسوموٹو اس طریقے کا تعارف کرتے ہوئے بتاتے ہیں:

٭ لباس کے کسی ایسے حصے سے کچھ کپڑا کاٹیں کہ جو باہر سے نظر نہ آتا ہو۔

٭ کاٹے ہوئے کپڑے پر ایسی ٹون محلول ڈالیں تاکہ اسے ادھیڑنا آسان ہوجائے۔

٭ کپڑے کے باریک ریشوں کو احتیاط سے علیحدہ علیحدہ کرلیں۔

٭ اب ان ریشوں سے سوراخ والی جگہ پر سلائی کریں۔

٭ پہلے ایک سمت میں سیدھے ٹانکے لگائیں اور اس کے بعد اس کی عمودی سمت میں ٹانکے لگائیں۔

٭ اندر اور باہر دونوں طرف سلائی کریں۔

٭ سلائی مکمل ہونے کے بعد فوراً استری پھیر دیں۔

ٹکاﺅ ماٹسوموٹو کہتے ہیں کہ جس کپڑے کو رفو کرنا ہو اسی میں سے دھاگے لینا ضروری ہے کیونکہ اس صورت میں کپڑا پہلے جیسا ہوجائے گا۔ کوئی دوسرا دھاگہ استعمال کرنے کی صورت میں جتنی بھی احتیاط کی جائے کچھ نہ کچھ فرق رہ جاتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس