سابق صدر مرسی وساتھیوں کی سزائے موت کی مذمت کرتے ہیں، ڈاکٹر وسیم اختر

سابق صدر مرسی وساتھیوں کی سزائے موت کی مذمت کرتے ہیں، ڈاکٹر وسیم اختر

لاہور(پ ر)امیر جماعت اسلامی پنجاب اورپارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سید وسیم اختر اور سیکرٹری جنرل نذیر احمد جنجوعہ نے جیل توڑنے کے الزام میں سابق صد ر مر سی ، اخوان المسلمین کے مرشد عام محمد بدیع،عالم دین یوسف القرضاوی سمیت 106افراد کو سزائے موت سنانے کے نام نہاد فوجی عدالتی فیصلے پر شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ او،آئی،سی ،یو،این ،او اور عالمی برادری اس ظالمانہ اقدام کا فور ی نوٹس لے ۔ یہ انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے ۔ کیونکہ عدالت نے انصاف کے تقاضے پورے نہیں کئے تھے ۔مجموعی طور پر غیر منصفانہ ٹرائل کیا گیا جو تشویشناک امر ہے ۔ اخوان المسلمین کے رہنما ؤں کو وکیل کی سہولت بھی فراہم نہیں کی گئی یہ انصاف کا خون کرنے کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت کے علمبرداروں کی عوامی حمایت پر منتحب ہونے والی حکومت پر فوجی جنرل’’ سیسی ‘‘کا شب خون مارنا اور اخوان المسلمین کے رہنماؤں کی سنگین سزاؤں پر خاموشی دوہرے مغربی معیار کی عکاسی کرتا ہے۔ امریکہ اور اس کے حواریوں کو برداشت نہیں کہ اخوان المسلمین کی اسلامی حکومت مصر میں قائم ہو۔ اسرائیل کے تحفظ کے لئے پہلے جمہوری حکومت کا تختہ الٹایا گیااور اب مظالم کے پہاڑ ڈھائے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان اخوان المسلمین کے رہنماؤں کو سزائے موت دینے کے فیصلے کو عالمی برادری کے سامنے اٹھاے۔مصر اور بنگلہ دیش میں اسلام کے نام لیواؤں کے خلاف انتقامی سیاسی کار وائیاں بند ہو نی چاہئیں۔انسانی حقوق کی علمبر دار این جی اوز اندھی ،گونگی اور بہری ہو چکی ہیں۔جماعت اسلامی پنجا ب کے رہنما ؤں نے مزید کہا کہ امت مسلمہ کے خلا ف یہود نصارا متحد ہو چکے ہیں۔ ان کی سازشوں کا مقابلہ کر نے کے لئے تما م مسلم ممالک کو اکٹھا ہو نا ہو گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1