تاجر زائد منافع کی ہوس میں رازق کے غضب کو آواز نہ دیں،چودھری عظمت

تاجر زائد منافع کی ہوس میں رازق کے غضب کو آواز نہ دیں،چودھری عظمت

 لاہور(پ ر) کریانہ ایسوسی ایشن لاہور کے جنرل سیکرٹری چودھری عظمت علی،شیخ اشرف منیر،میاں طاہر ،حاجی شیخ آصف،مرزاعنایت علی،ملک احمدسلیم اور ملک عارف پرویز نے کہا ہے کہ ''روزے لگانے'' کامائنڈسیٹ تجارت نہیں ہے۔مسلمان ٹریڈرزضرورت سے زیادہ رزق کی ہوس میں رزاق کے غضب کوآوازنہ دیں ۔ مہنگائی کنٹرول کرنے کیلئے چھوٹے دکانداروں پرشب خون مارنا اوران بیچاروں پرسکت سے زیادہ بوجھ ڈالنادرست نہیں، بڑے مگرمچھوں پرہاتھ ڈالناہوگا ۔حکومت ماہ صیام کے سلسلہ میں ایک ضابطہ اخلاق اوربڑے ٹریڈرزکواس کاپابند بنائے ۔ تجارت میں ایمانداری کے بغیرماہ صیام کے احترام کاتقاضاپورانہیں ہوتا ۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔مقررین نے مزید کہا کہ اسلام تجارت پرجائزمنافع کی اجازت دیتا ہے ،دکانداراورعوام حلال حرام میں فرق ملحوظ خاطررکھیں۔جس انسان میں انسانیت اوردوسرے انسانوں کااحساس نہیں وہ حیوان سے بھی بدتر ہے۔انہوں نے کہا کہ برطانیہ سمیت یورپی ملکوں میں ٹریڈرز اپنے مذہبی تہواروں پراپنی مختلف مصنوعات پرپچاس فیصد سے زیادہ ڈسکاؤنٹ کرتے ہیں ۔    جبکہ اسلامی جمہوریہ پاکستان میں ماہ صیام سمیت مختلف مذہبی تہواروں پر ضروریات زندگی کے نرخ کئی گنابڑھ جاتے ہیں ۔ٹریڈرز ماہ صیام کے سلسلہ میں مصنوعات کے معیار کاخاص خیال رکھیں ۔ توشہ آخرت کیلئے روزہ داروں کوخصوصی ریلیف دیا جائے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4