دو عرب باشندوں کا غیر ملکی سے انسانیت سوز سلوک، جیل کی ہوا کھانا پڑگئی

دو عرب باشندوں کا غیر ملکی سے انسانیت سوز سلوک، جیل کی ہوا کھانا پڑگئی

 دوحہ (نیوز ڈیسک) دو عرب باشندوں کو دوحہ کی عدالت نے غیر ملکی کے ساتھ انتہائی انسانیت سوز سلوک کرنے کے جرم میں ایک سال قید کی سزا سنادی۔العربیہ کے مطابق دونوں عربوں پر الزام تھا کہ انہوں نے غیر ملکی ایشین نژاد ڈرائیور کی مونچھیں، داڑھی اور سرمونڈ دیا تھا۔ عرب باشندوں نے عدالت میں یہ تاویل پیش کی کہ ڈرائیور نے گاڑی کو دوحہ کی سڑکوں پر تیز بھگاتے ہوئے بہت زیادہ نقصان پہنچایا اور ان کی گاڑی کو بھی تباہ کردیا۔ ڈرائیور نے ان الزامات کو رد کرتے ہوئے کہا کہ ایک اور گاڑی میں دو اجنبی شخص بیٹھ کر اسے روکنے کا اشارہ کررہے تھے اور جب اس نے اپنی گاڑی نہ روکی تو انہوں نے اس کا پیچھا شروع کردیا اور زبردستی گاڑی روک کر سے تشدد کا نشانہ بنایا۔ اس کا کہنا تھا کہ دونوں حملہ آوروں نے اسے گاڑی کی پچھلی سیٹ پر پھینک کر شیور سے اس کا آدھا سر، داڑھی اور مونچھیں مونڈ دیں اور اپنی گاڑی میں فرار ہوگئے۔ ڈرائیور نے پولیس کو واقعہ کی اطلاع دی اور دونوں عرب باشندوں کو گرفتار کرلیا گیا۔ عدالت میں انہوں نے اپنے جرم کا اقبال کرتے ہوئے کہا کہ وہ غیر ملکی کو گاڑی تیز چلانے اور شہریوں کی زندگی خطرے میں ڈالنے پر سبق سکھانا چاہتے تھے۔ لیکن عدالت نے ان کی استدعا کرتے ہوئے انہیں ایک سال قید کی سزا دے دی۔ تینوں افراد کی شہریت کے بارے میں کچھ نہیں بتایا گیا۔

مزید : صفحہ آخر