شب معراج پر بھی ملک میں بد ترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا

شب معراج پر بھی ملک میں بد ترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا

لاہور( وقائع نگار ) وزارت بجلی و پانی کی نا اہلی کے باعث شب معراج کے موقع پر بھی ملک میں بد ترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا ۔ جس سے لوگوں کو عبادات میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔ چھوٹے علاقوں کی وہ مساجد جہاں متبادل بجلی کا انتظام نہ تھا وہ عبادت گزاروں کے نماز کے قیام و سجود سے محروم رہیں ۔ بار بار ہونے والی لوڈ شیڈنگ سے گھروں میں عبادات کرنے والی خواتین کو بھی شدید دشواری ہوئی ۔ ماضی میں ہمیشہ ہی متبروک راتوں میں لوڈ شیڈنگ نہ کئے جانے کے حوالے سے خصوصی اقدامات کئے جاتے ہیں لیکن اس شب معراج کے موقع پر وزارت بجلی و پانی کی جانب سے بجلی کی مسلسل فراہمی کے لئے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے ۔ گزشتہ روز ملک میں عام تعطیل کے باعث بجلی کی ڈیمانڈ میں کمی رہی جس سے شارٹ فال بھی کم رہا ۔ شارٹ فال میں کمی کے باعث مرمت کے نام پر بجلی کی بندش کا سلسلہ مکمل بند رکھا گیا ۔ شارٹ فال میں کمی کا ریلیف مسلسل بندش کو دیئے جانے کے باعث عام گھریلو صارفین کے لئے بجلی کی لوڈ شیڈنگ میں کوئی نمایاں کمی نہیں ہوئی ۔ گزشتہ روز شہروں میں دس سے بارہ گھنٹے اور دیہی علاقوں میں پندرہ سے سولہ گھنٹے تک کی لوڈ شیڈنگ کی گئی۔ بار بار لوڈ شیڈنگ کے باعث بیشتر علاقوں میں پانی کی قلت کا بھی سامنا رہا ۔ انرجی مینجمنٹ سیل کے ذرائع کے مطابق گزشتہ روز بجلی کی مجموعی ڈیمانڈ 15750 میگا واٹ جبکہ پیداوار 10310 میگا واٹ رہی طلب و رسد میں 4940 میگا واٹ کا فرق رہا ۔ لوڈ شیڈنگ

مزید : صفحہ آخر