دنیا کی پہلی گرم خون والی مچھلی دریافت کرلی گئی

دنیا کی پہلی گرم خون والی مچھلی دریافت کرلی گئی

نیویارک (این این آئی)امریکہ کی سمندری حیات کیلئے کام کرنے والے ادارے این او اے اے کے سائنسدانوں نے مچھلی کے غیر معمولی اندرونی نظام کو دریافت کیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق بیضوی شکل کی مچھلی کسی گاڑی کے ٹائر جتنی جسامت کی ہوتی ہے اور تیزرفتاری سے تیرنے کے ساتھ ساتھ تیر ردعمل کے ساتھ خطرناک شکاری مانی جاتی ہے اور عام طور پر گہرے پانیوں میں ہی ملتی ہے۔سائنسدانوں کے مطابق مچھلی کا گرم جسم ہی اسے متحرک شکاری بناتا ہے جو اپنے تیز ترین شکاروں کا کامیاب کرسکتی ہے اور طویل فاصلے تک ہجرت بھی کرسکتی ہے۔سائنسدانوں نے کہاکہ فطرت اپنے مظاہر سے ہمیشہ ہی ہمیں حیران کردیتی ہے۔

اور کون سوچ سکتا ہے کہ سرد پانیوں میں رہتے ہوئے کوئی خود کو گرم رکھ سکتا ہے مگر اوفا کی یہ سب سے بڑی خاصیت ہے۔

مزید : عالمی منظر