نائجیریا میں انسانی گوشت بیچنے والے ریسٹورنٹ کا انکشاف

نائجیریا میں انسانی گوشت بیچنے والے ریسٹورنٹ کا انکشاف

 ابوجا (نیوز ڈیسک) نائجیریا میں انسانی گوشت بیچنے والے ریسٹورنٹ کے انکشاف نے پورے ملک پر لرزہ طاری کردیا جبکہ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے متعدد گرفتاریاں کرکے ریسٹورنٹ کو بند کردیا۔برطانوی نشریاتی ادارے ’’بی بی سی‘‘ کے مطابق انمبرا کے علاقے میں واقع ریسٹورنٹ کے بارے میں تشویشناک اطلاعات موصول ہونے کے بعد پولیس اس کی نگرانی کررہی تھی۔ جب پولیس نے ریسٹورنٹ پر چھاپا مارا تو بڑی مقدار میں کٹا ہوا انسانی گوشت برآمد ہوا جبکہ کچھ تازہ کٹے ہوئے انسانی سر بھی برآمد ہوئے جن میں سے ٹپکنے والا خون پلاسٹک کے لفافوں میں جمع کیا جارہا تھا۔پولیس کو ملنے والی شکایات میں سے ایک شکایت مقامی پادری کی طرف سے کی گئی تھی جس میں بتایا گیا تھا کہ اسے گوشت کا ایک ٹکڑا کھانے پر 4.4 ڈالر (تقریباً 440 پاکستانی روپے) کا بل تھمادیا گیا۔ جب پادری نے گوشت کے چھوٹے سے ٹکڑے کی اتنی زیادہ قیمت پر ویٹر سے تفتیش کی تو انہیں اس کے جوابات مشکوک لگے جس کے بعد انہوں نے پولیس کو شکایت کردی۔ریسٹورنٹ سے انسانی گوشت کے علاوہ آٹو میٹک ہتھیار، گرینیڈ اور متعدد موبائل فون بھی برآمد ہوئے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ریسٹورنٹ کو بند کردیا گیا ہے جبکہ 10 افراد کو گرفتار کرکے ان سے تفتیش کی جارہی ہے۔

مزید : صفحہ آخر