ایبٹ آبادآپریشن ، جرمن خفیہ ایجنسی نے اسامہ کی تلاش میں مدد فراہم کی تھی:جرمن اخبار

ایبٹ آبادآپریشن ، جرمن خفیہ ایجنسی نے اسامہ کی تلاش میں مدد فراہم کی تھی:جرمن ...
ایبٹ آبادآپریشن ، جرمن خفیہ ایجنسی نے اسامہ کی تلاش میں مدد فراہم کی تھی:جرمن اخبار

  

برلن (مانیٹرنگ ڈیسک )جرمن میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ جرمنی کی خفیہ سروس’ بی این ڈی‘ نے بھی القاعدہ کے سابق سربراہ اسامہ بن لادن کی تلاش میں مدد دی تھی اوراہم شواہد حاصل کیے تھے۔

 جرمن اخبار ”بِلڈ اَم زونٹاگ “کے مطابق بی این ڈی نے امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کو یہ اطلاع دی تھی کہ اسامہ بن لادن پاکستان میں چھپا ہوا ہے اور پاکستانی سیکیورٹی حکام کو بھی اسامہ بن لادن کی موجودگی کاعلم ہے ۔

 بتایا گیا ہے کہ جرمن خفیہ ادارے کو یہ اطلاع پاکستانی خفےہ ادارے کے ایک ایجنٹ کی وساطت سے ملی تھی جو گزشتہ کئی برسوں سے بی این ڈی کے لیے کام کر رہا تھا۔

 برطانوی خبر رساں ادارے رائٹرز نے اس جرمن اخبار کے حوالے سے بتایا ہے کہ بی این ڈی کی طرف سے فراہم کردہ معلومات کے بعد سی آئی اے کا شک اور پختہ ہو گیا اور اس نے زیادہ بھرپور تکنیکی اور افرادی ذرائع سے استفادہ کرتے ہوئے بن لادن تک پہنچنے کی کوشش شروع کر دی ۔

مزید شواہد اکٹھے کرنے کے بعد امریکہ نے ایبٹ آباد میں دو مئی کی رات کو آپریشن کیا اور مبینہ طورپر اسامہ بن لادن کوموت کے گھاٹ اتار کرلاش اپنے ساتھ لے گئے اور سمندر بردکردی ۔یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ اس آپریشن کے بعد اسامہ بن لادن کی موت آج تک ایک معمہ بنی ہوئی ہے اور تجزیہ نگاروں اور کئی سابق فوجیوں کا کہناہے کہ اسامہ بن لادن ایک عرصہ قبل اپنی طبی موت مرچکے تھے اور امریکہ کے صدارتی انتخابات سے چند ماہ قبل اوباما کو دوسری بار کامیاب کرانے کے لیے یہ ڈرامہ کیاگیا۔

مزید : بین الاقوامی