پاکستان میں دہشتگردی اور بھارت، خفیہ ایجنسی ’را‘ کی مداخلت کابنیادی مقصد سامنے آگیا

پاکستان میں دہشتگردی اور بھارت، خفیہ ایجنسی ’را‘ کی مداخلت کابنیادی مقصد ...
پاکستان میں دہشتگردی اور بھارت، خفیہ ایجنسی ’را‘ کی مداخلت کابنیادی مقصد سامنے آگیا

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں دہشتگردی کیخلاف جاری کامیاب آپریشن کے باوجود دہشتگردی کی وارداتیں ایک مرتبہ پھر شروع ہوگئی ہیں اور اس میں پڑوسی ملک کی خفیہ ایجنسی کی مداخلت کی کہانیاں بھی زبان زدعام ہیں ، اس کی بنیادی وجہ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ اورپاک افغان بڑھتے ہوئے تعلقات ہیں، پاکستان کی سیاسی جماعت کے ملوث ہونے کی بھی چہہ مگوئیاں جاری ہیں اور اس ضمن میں بی بی سی کچھ عرصہ قبل ایک رپورٹ بھی شائع کرچکی ہے جس کی ایم کیوایم نے حسب معمول تردید بھی کی تھی ۔

جیونیوز کے پروگرام آپس کی بات میں گفتگوکرتے ہوئے نجم سیٹھی کاکہناتھاکہ بھارتی سرکاری اپنی خفیہ ایجنسی کے ذریعے مختلف شدت پسندتنظیموں کوفنڈز اور جدید اسلحہ دے رہی ہے، پاک چائنہ اقتصادی راہداری کی وجہ سے پاکستان کی جو نئی حیثیت بننے جارہی ہے ،بھارت اسے نقصان پہنچانا چاہ رہا ہے، پاکستان اور افغانستان کے بڑھتے تعلقات سے بھی بھارت ناراض ہے۔

ایک سوال کے جواب میں نجم سیٹھی نے کہا کہ 2013ءمیں بی بی سی کے نمائندہ اون بینٹ جونز نے برطانوی اخبار میں الطاف حسین پر ایک مضمون لکھا تھا جس میں اس نے لکھا تھا کہ برطانیہ کا رویہ ایم کیو ایم کی طرف بہت نرم رہا ہے،اس کی وجہ یہ ہے کہ برطانیہ نے کراچی کی انٹیلی جنس ایم کیو ایم کو آﺅٹ سورس کردی ہے اور اب برطانیہ کیلئے ایم کیو ایم ایک اثاثہ ہے، دوسری بات اس نے یہ لکھی تھی کہ جب عمران فاروق قتل ہوگئے، اس کے بعد جب تحقیقات ہوئیں اور میٹروپولیٹن پولیس ان کے گھر گئی تو وہاں بہت سے کاغذات ایسے ملے تھے جن سے واضح ہوتا تھا کہ ایم کیو ایم کا ’را‘ اور بھارتی حکومت کے ساتھ لنک ہے، اون بینٹ جونز نے خود وہ کاغذات دیکھے تھے۔

 نجم سیٹھی نے کہا کہ وہ چیزیں دوبارہ ا±بھر رہی ہیں، اس کا مطلب ہے کہ دال میں کچھ کالا ضرور ہے، وزیر دفاع کی جانب سے یہ کہنے کی بڑی اہمیت ہے کہ ’را‘ کے پاکستان کی ایک سیاسی جماعت کو سپورٹ کررہی ہے۔

مزید : کراچی