کئی دن تک موت کی وادی میں رہنے کے بعد جب زندگی کی طرف لوٹا تو سب سے پہلے اپنی سیلفی بنائی

کئی دن تک موت کی وادی میں رہنے کے بعد جب زندگی کی طرف لوٹا تو سب سے پہلے اپنی ...
کئی دن تک موت کی وادی میں رہنے کے بعد جب زندگی کی طرف لوٹا تو سب سے پہلے اپنی سیلفی بنائی

  

بوسٹن (نیوز ڈیسک) فیس بک کے بانی ملازمین میں شمار ہونے والے 34 سالہ کیون کولران، جو آج کل اپنی کمپنی چلاتے ہیں، فروری میں ایک خوفناک حادثے کا شکار ہوگئے لیکن جب موت و حیات کی طویل کشمکش کے بعد ہوش میں آئے تو سب سے پہلے ایک سیلفی بنائی اور اسے فیس بک پر پوسٹ کردیا۔

کیون نے اپنی مادر علمی بابسن کالج میں طلبا سے خطاب کے دوران اس عجیب و غریب واقعہ پر اظہار خیال کیا۔

مزیدپڑھیں:اگر آپ اپنے محبوب سے تنگ ہیں تو اس خبر سے فائدہ اٹھائیں،اور بآسانی اس سے جان چھڑوائیں

انہوں نے بتایا کہ 27 فروری کو وہ بوسٹن شہر کی ایک سڑک پار کررہے تھے کہ ایک ٹرک نے انہیں ٹکر ماردی۔ ان کے ہواس کھونے پر انہیں ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے پتہ چلایا کہ ان کے دماغ میں گہری چوٹ آنے کی وجہ سے دماغ کے اندر خون بہہ رہا تھا۔ ڈاکٹروں نے دماغ سے خون نکالنے کے لئے ایک نالی لگائی اور دیگر طبی اقدامات بھی فوری طور پر کئے گئے۔ کیون کو جونہی ہوش آیا اس نے اپنے دماغ سے خون نکالنے والی نالی سمیت تمام آلات اور اپنے حالات کو ایک سیلفی کی صورت میں محفوظ کیا اور فیس بک پر پوسٹ کردیا۔ انہوں نے طلبا کو بتایا کہ وہ اپنی زندگی کے فیصلوں سے بہت خوش رہے ہیں اور موت کے ساتھ آمنے سامنے کو بھی اپنی زندگی کا گراں قدر تجربہ سمجھتے ہیں لہٰذا انہوں نے اسے تصویر کی صورت میں محفوظ کرکے دنیا کے ساتھ شیئر کردیا کیونکہ وہ اپنی زندگی کے لمحات اور تجربات میں سے کچھ بھی بدلنا نہیں چاہتے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس