علماءحق کا احترام کرتا ہوں، علمائےسو کیخلاف بیان دیا جنہوں نے لوگوں میں اختلافات پیدا کئے: پرویز رشید

علماءحق کا احترام کرتا ہوں، علمائےسو کیخلاف بیان دیا جنہوں نے لوگوں میں ...
علماءحق کا احترام کرتا ہوں، علمائےسو کیخلاف بیان دیا جنہوں نے لوگوں میں اختلافات پیدا کئے: پرویز رشید

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات پرویز رشید نے کہا ہے کہ انہوں نے اپنے بیان میں نصاب کی جانب اشارہ کیا تھا، علماءو مدارس کی طرف نہیں، بیان کی غلط تاویل کر کے خاندان اور بچوں کی زندگیاں خطرے میں ڈالی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ میں اپنے بیان کی وضاحت کرتے ہوئے پرویز رشید نے کہا کہ ہمارے تعلیمی نظام میں کمی ہوتی جا رہی ہے اور تعلیمی نظام میں بچوں کو امن اور بھائی چارے کا درس دینا بھول گئے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ اسلام کو غلط انداز میں پیش کرنے والوں کے خلاف بیان دیا اور ملکی تعلیمی نصاب کی جانب اشارہ کیا تھا نا کہ علماءاور مدارس کی جانب اور اگر یہ سب بولنا جرم ہے تو میں مجرم ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ علمائے حق کا احترام کرتا ہوں لیکن علمائے سو کیلئے میرا بیان وہی ہے جنہوں نے دہشت گردی کے ذریعے ملک میں خون بہایا اور لوگوں میں اختلافات پیدا کئے، آج پاکستان میں عبادت گاہیں اور علماءبھی محفوظ نہیں ہیں۔ پرویز رشید نے کہا کہ ساجد میر اور عطاءالرحمان ایک دوسرے کے مدرسے نہیں جاتے لیکن میرے خلاف دونوں اکٹھے ہو گئے ہیں، خدا کرے ان میں اتفاق ہو۔

مزید : قومی /اہم خبریں