اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر عائشہ نے باقاعدہ طور پر اپنا استعفیٰ انتظامیہ کو ارسال نہیں کیا

اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر عائشہ نے باقاعدہ طور پر اپنا استعفیٰ انتظامیہ کو ارسال ...

  

پشاور (سٹی رپورٹر) ایل آر ایچ کے انھستیزیا ڈیپارٹمنٹ کی اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر عائشہ نے باقاعدہ طور پر اپنا استعفیٰ انتظامیہ کو ارسال نہیں کیا ہے. اس سلسلے میں ڈاکٹر عائشہ سے رابطہ کیا گیا جنہوں نے ایل آر ایچ انتظامیہ سے بعض معاملات پر ناراضگی ظاہر کی تھی لیکن انہوں نے اپنا استعفی ابھی تک جمع نہیں کروایا. ترجمان نے چار مزید ڈاکٹروں کے استعفیٰ کی خبر کی بھی سختی سے تردید کی ہے اور کہا ہے کہ ایل آر ایچ کے معاملات پر بعض لوگ سیاست کر رہے ہیں جن کا مریضوں سے کوئی سروکار نہیں ہے. انہوں نے مزید کیا ایل آر ایچ میں ڈاکٹرز کے ڈیوٹی روٹے کو تبدیل کر دیا گیا ہے تا کہ ڈاکٹرز بہتر طریقے سے اپنی ڈیوٹی سرانجام دے سکیں. پرانے روٹے کے مطا بق ڈاکٹرز 5 دن مسلسل ڈیوٹی کرنے کے بعد 14 دن چھٹی کرتے تھیجبکہ نئے روٹے کے مطابق اب 12 گھنٹے کی ڈیوٹی جبکہ 36 گھنٹے چھٹی کریں گے. مزکورہ روٹا شوکت خانم سے آئے ہوئے ڈاکٹر احسن نے تجویز کیا جس کو مینیجمنٹ کمیٹی ایل آر ایچ نے منظوری کر لیا. کورونا وارڈز اور آئی سی یوز میں کام کرنے والے تمام عملے پہ لاگو ہوگا. محمد عاصم نے کہا کہ کورونا وارڈز اور آئی سی یوز میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کر دیے گئے ہیں جس سے وارڈز کے اندر کے حالات کا براہ راست جائزہ لیا جا رہا ہے تاکہ مریضوں اور ہسپتال عملے کی ضروریات کو بروقت پورا کیا جا سکے. انہوں نے مزید کہا کہ ایل آر ایچ انتظامیہ کے لئے انتہیائی مشکل حالات ہیں ایک طرف کورونا کے مریضوں کی جان بچانے کے لئے دن رات کوششیں جاری ہیں جبکہ دوسری طرف ایل آر ایچ کے عملے کی حفاظت بھی اولین ترجیحات میں سے ہے.ایسے حالات میں ایل آر ایچ میں روزانہ 70 کے قریب دوسرے بڑے آپریشن بھی کئے جا رہے ہیں جبکہ ایمرجنسی میں لائے گئے تمام مریضوں کا علاج بھی کیا جا رہا ہے.

مزید :

پشاورصفحہ آخر -