سندھ میں 787نئے کورونا مریض، 114کی حالت نازک، 31وینٹی لیٹر پر ہیں 

سندھ میں 787نئے کورونا مریض، 114کی حالت نازک، 31وینٹی لیٹر پر ہیں 

  

کراچی(این این آئی)وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ سندھ کے سرکاری ہسپتالوں میں 451وینٹی لیٹرزموجودہیں، ان میں سے109کوروناوائرس مریضوں کیلئے مخصوص کردیئے گئے ہیں جن میں سے صرف31مریض وینٹی لیٹرز پر ہیں۔ ہم نے اپنے ہسپتالوں  اور کورونا وائرس کے مراکز کو تمام تر ضروری سامان سے آراستہ کیا ہے تاکہ وہ اپنے مریضوں کو علاج معالجے کی بہترین سہولیات مہیا کرسکیں۔ اتوار کو جاری ایک بیان میں مرادعلی شاہ نے کہا کہ اتوارکے روزکورونا وائرس سے9افراد جان کی بازی ہار گئے اس طرح مجموعی اموات کی تعداد 277ہوگئی ہے جبکہ 5034مزید ٹیسٹ کیے جانے پر787نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔ حکومت نے اب تک 122894ٹیسٹ کیے ہیں جن میں سے 16377مریضوں کی تشخیص ہوئی ہے جو کل ٹیسٹوں کا 13.3فیصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبے میں 114مریضوں کی حالت تشویشناک ہے، ان میں سے 31وینٹی لیٹر زپر ہیں۔ اس وقت11891مریض زیر علاج ہیں جن میں سے 10485گھر میں آئسولیشن میں ہیں، 838آئسولیشن مراکز میں اور 568مختلف ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔405مزید مریضوں کی صحت یابی سے تندرست ہونے والوں کی تعداد4209ہوگئی ہے۔787مریضوں میں سے 515کا تعلق کراچی سے ہے، ان میں سے ضلع شرقی میں 147،جنوبی میں 121،وسطی میں 109،ملیر میں 52، کورنگی44اورغربی میں 42ہیں۔ شکارپور31،لاڑکانہ اور سکھر 25۔25، حیدرآباد16، گھوٹکی14،قمبر شہدادکوٹ13، خیرپور6اور جامشورو میں 3نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔

مرادعلی شاہ

مزید :

صفحہ اول -