جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سیکریٹری نشرواشاعت قاری قاسم کے لئے تعزیتی ریفرنس منعقد کیا گیا

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سیکریٹری نشرواشاعت قاری قاسم کے لئے تعزیتی ریفرنس ...
جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سیکریٹری نشرواشاعت قاری قاسم کے لئے تعزیتی ریفرنس منعقد کیا گیا

  

ریاض (وقار نسیم وامق) سعودی عرب میں جمعیت علماء اسلام ریاض ریجن کے سیکرٹری نشرواشاعت قاری محمد قاسم کے بہیمانہ قتل کی مذمت اور جماعت کے ساتھیوں سمیت اہلخانہ سے اظہار یکجہتی کے لئے آن لائن تعزیتی ریفرنس کا اجلاس منعقد کیا گیا. 

قاری قاسم کو چند روز قبل پاکستان میں فائرنگ کرکے قتل کر دیا گیا تھا، اہلِ ریاض کی سیاسی و سماجی جماعتیں جن میں مسلم لیگ ن، پیپلزپارٹی، قومی وطن پارٹی، اے این پی، مجلس پاکستان، پاک سرزمین پارٹی، جمعیت اہل حدیث کے عہدیداروں اور ممبران نے شرکت کی جبکہ جمعیت علمائے اسلام ف کے عہدیداروں نے بھی بھرپور شرکت کی. 

اس موقع پر شرکاء نے قاری محمد قاسم کے قتل پر انتہائی افسوس اور دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ قاری قاسم کے قتل سے ریاض میں موجود پوری پاکستانی کیمونٹی صدمے سے دوچار ہے اور اس واقعے کے بعد کمیونٹی کے ارکان میں غم وغصہ پایا جاتا ہے قاری قاسم ایک ملن سار شخصیت کے مالک تھے، وہ جہاں دینی معاملات کی انجام دہی میں مصروف رہتے وہیں پر سیاست میں بھی ایک سرگرم رکن کے طور پر جانے جاتے ہیں وہ ہر تقریب کا حصہ ہوتے اور اپنے اچھے اخلاق کی بدولت ہر سیاسی جماعت کے ساتھ ان کے اچھے تعلقات تھے اسی بنا پر لوگوں کے درمیان ان کی محبت بہت کم عرصے میں پروان چڑھی انکی کمی ہمیشہ محسوس کی جاتی رہے گی اور ان کی دینی اور سیاسی خدمات کو کبھی فراموش نہیں کیا جا سکتا. 

آن لائن تعزیتی اجلاس سے مسلم لیگ ن سے خالد اکرم رانا، مرزا منیر بیگ، زاہد لطیف سندھو، پیپلزپارٹی سے محمد خالد رانا، احسن عباسی، قاضی اسحاق میمن، ریاض راٹھور، محمد اصغر قریشی، قومی وطن پارٹی سے اقبال ودود، اے این پی سے لالہ ظہور احمد، جمعیت اہلحدیث سے عمر فاروق کیانی، مجلس پاکستان سے رانا عبدالرؤف اور دیگر افراد میں حلقہ فکروفن کے ڈاکٹر ریاض، بزمِ ریاض کے تصدق گیلانی نے اظہار خیال کیا اور قاری محمد قاسم کے قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کی جبکہ جمعیت علمائے اسلام ریاض کے صدر مولانا اسد اللہ خان، جنرل سیکرٹری ممتاز خان اور دیگر ساتھیوں نے بھی قاری محمد قاسم کے قتل پر شدید احتجاج کیا اور مطالبہ کیا کہ گرفتار ملزمان کے خلاف جلد از جلد کارروائی کی جائے اور انہیں کیفر کردار تک پہنچایا جائے. 

اس موقع پر مولانا اسداللہ خان اور ممتاز خان نے اہلِ ریاض کی جانب سے تعزیتی اجلاس کو سراہا اور کہا کہ اہلِ ریاض نے ہمیشہ دکھ کی کھڑی میں ساتھ دیا ہے اور جس طرح تمام احباب بشمول صحافی بھائیوں نے ان کی دکھ کی گھڑی میں ساتھ نبھایا ہے وہ اس کو ہمیشہ یاد رکھیں گے اور ہم تمام مکاتب فکر کے افراد کے بھی مشکور ہیں کہ انہوں نے مشکل کی اس گھڑی میں ہمارا ساتھ دیا ہے آخر میں مولانا اسداللہ نے قاری قاسم کے لئے دعائے مغفرت فرمائی. 

مزید :

عرب دنیا -تارکین پاکستان -