کیمیکل ملا دودھ تیار کرنے والی فیکٹری پر چھاپہ، مشینری ضبط

کیمیکل ملا دودھ تیار کرنے والی فیکٹری پر چھاپہ، مشینری ضبط

  

 لاہور(سٹی رپورٹر) پنجاب فوڈ اتھارٹی نے دودھ کے نام پر کیمیکلز ملا محلول تیار کرنے والوں کے خلاف گرینڈ آپریشن کرتے ہوئے پتوکی میں یونٹ پر چھاپہ مارکر  لاہور لایا جانے والا 5 ہزار لیٹر جعلی دودھ، 100کلو خشک دودھ پاؤڈر، 64 لٹرکوکنگ آئل بھی تلف، مالک کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔مکسر، سکشن پمپ، کریم مشین، فیٹ مکسنگ مشین، پلاسٹک ڈرمز بھی ضبط کرلئے گئے۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی رفاقت علی نسوآنہ نے کہاکہ سکمڈ ملک، کوکنگ آئل اور مضر صحت کیمیکلز سے جعلی دودھ تیار کیا جا رہا تھا۔کوکنگ آئل اور کیمیکلز کی ملاوٹ سے بلائی،کریم اور فیٹ سے بھرپور نقلی دودھ تیار کیا جا رہا تھا۔مضر صحت اجزا کو مختلف مشینوں میں ڈال کراصلی رنگت اور ذائقے والا جعلی دودھ تیار کیا جا تا تھا۔ مضر صحت جعلی دودھ کو بڑے ٹینکروں میں لاہور سپلائی کیا جا نا تھا۔عوام کی صحت سے کھیلواڑ کرنے والے صحت عناصر دشمن معاشرے کا بڑا ناسور ہیں۔ جعلی دودھ کا استعمال بچوں اور بڑوں میں متعدد بیماریوں کا باعث بن سکتا ہے۔انہوں نے کہاکہ پنجاب فوڈ اتھارٹی قوانین کے مطابق دودھ میں ملاوٹ سنگین جرم ہے۔دودھ سمیت تمام اشیا خورونوش کی کڑی نگرانی کی جا رہی ہے۔وزیر اعلی پنجاب کی ہدایت کے مطابق ملاوٹ اور جعلی سازی کرنے والوں کا جڑ سے خاتمہ کریں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -