بھارت میں دوائی لینے جانے والے مسلمان نوجوان کو انتہا پسند ہندووں نے تشدد کا نشانہ بنا کر شہید کردیا

بھارت میں دوائی لینے جانے والے مسلمان نوجوان کو انتہا پسند ہندووں نے تشدد کا ...
بھارت میں دوائی لینے جانے والے مسلمان نوجوان کو انتہا پسند ہندووں نے تشدد کا نشانہ بنا کر شہید کردیا

  

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارتی ریاست ہریانہ میں انتہا پسند ہندووں نے تشدد کا نشانہ بنا کر مسلمان نوجوان کو شہید کردیا ۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ریاست ہریانہ میں ہندو انتہاپسندوں نے تین مسلمان نوجوانوں کو بدترین تشدد کا نشانہ بنایا اور جے شری رام کا نعرے لگانے پر زور دیتے رہے تاہم انتہاپسندوں کے بہیمانہ تشدد کے باعث آصف خان نامی نوجوان جاں بحق ہوگیا۔آصف خان جم ٹرینر ہے جو اپنے دوستوں کے ساتھ دوائی لینے جارہاتھا کہ راستے میں 15 کے قریب انتہا پسندوں نے گاڑی کو روکا اور کار کے شیشہ پر پتھر مارے، انتہا پسندوں کے ہجوم نے آصف کے ساتھ گاڑی میں سوار اس کے دو دوستوں واصف اور راشد کو بھی بدترین تشدد کا نشانہ بنایا جس کے باعث راشد ہسپتال کے انتہائی نگہداشت میں زیر علاج ہے۔آصف خان کے رشتہ داروں کے مطابق آصف کے دونوں دوست مشتعل ہجوم سے بھاگ کر جان  بچانے میں کامیاب ہوگئے تاہم انتہاپسندوں نے آصف کو مار کر لاش کو گاو¿ں کے قریب پھینک دیا۔ دوسری جانب واقعہ کے بعد ابھی تک کوئی بھی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -