بزم علم و ادب جدہ کے   ہم زبان کا عالمی '' باپ'' مشاعرہ

 بزم علم و ادب جدہ کے   ہم زبان کا عالمی '' باپ'' مشاعرہ
 بزم علم و ادب جدہ کے   ہم زبان کا عالمی '' باپ'' مشاعرہ

  

مکہ مکرمہ (محمدعامل عثمانی) گزشتہ دنوں بزم علم و ادب "ہم زبان" کے زیراہتمام عالمی '' باپ'' مشاعرے کا اہتمام بذریعہ زوم لنک کیا گیا جس میں دنیا کے آٹھ ممالک سے تعلق رکھنے والے چھبیس شعراء کرام نے اپنے منظوم کلام کے ذریعے والد مکرم کو خراج تحسین پیش کیا۔

مشاعرے کی مہمان خصوصی عالمی شہرت یافتہ شاعرہ ریحانہ روحی تھیں جنھوں نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ پہلا موقع ہے کہ باپ جیسی عظیم ہستی کو ایک مکمل مشاعرے کی صورت خراج عقیدت پیش کیا جا رہا ہے۔ مشاعرے کی صدارت تنویر پھول نے کی۔ مشاعرے کے ناظم ہم زبان کے صدر ڈاکٹر محمد سعید کریم بیبانی تھے۔ تلاوت کلام پاک کے بعد اسلام آباد سے سمیعہ جبین نے نعت شریف پڑھی جبکہ فوزیہ عباس نے والد مکرم کے بارے میں مختصر انشائیہ پیش کیا جس کے بعد مشاعرے کا آغاز ہوا۔

مشاعرے میں پاکستان سے ریحانہ روحی، نجمہ شاہین کھوسہ،الیاس بابر اعوان، زاہد علی اداس، زیب النساء زیبی، منظر انصاری اور رشیدہ دستگیر نازش، سعودی عرب سے نعیم جاوید، زمرد سیفی اور ہم زبان کے صدر ڈاکٹر محمد سعید کریم بیبانی، بھارت سے محشر فیض آبادی، ممتاز پیر بھائی، نور جمشید پوری، فوزیہ اختر ردا اور رئیس اعظم حیدری، امریکہ سے محسن علوی، غوثیہ غیاث الدین، رشید شیخ اور تنویر پھول، کینیڈا سے رحمان خاور اور صالح اچھا، برطانیہ سے نغمانہ کنول، چین سے ڈاکٹر محمد اعجاز کشمیری اور جرمنی سے طاہرہ رباب نے حصہ لیا اور باپ کی عظمت پر گلہائے عقیدت نچھاور کئے۔

مزید :

تارکین پاکستان -