ڈالر کی قیمت کو لگام ڈالنے کیلئے اقدامات، موبائل فونز اور گاڑیوں پر عائد ریگولیٹری ڈیوٹی میں کتنے اضافے کا امکان ہے ؟ بڑی خبر 

ڈالر کی قیمت کو لگام ڈالنے کیلئے اقدامات، موبائل فونز اور گاڑیوں پر عائد ...
ڈالر کی قیمت کو لگام ڈالنے کیلئے اقدامات، موبائل فونز اور گاڑیوں پر عائد ریگولیٹری ڈیوٹی میں کتنے اضافے کا امکان ہے ؟ بڑی خبر 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت کو لگام ڈالنے کیلئے حکومت نے لگژری اور غیر ضروری اشیا کی امپورٹ پر پابندی لگا دی ہے جبکہ گاڑیوں ، موبائل فونز اور دیگر متعدد چیزوں کی درآمد پر ریگولیٹری ڈیوٹی میں اضافہ کیئے جانے کا قوی امکان ہے ۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق درآمدی ٹائرز کی ریگولیٹری ڈیوٹی میں 50فیصد ، گھریلو بجلی کے آلات پرریگولیٹری ڈیوٹی 50فیصد، پاور جنریشن مشین پرآرڈی 30فیصد، ٹائلزکی درآمد پرریگولیٹری ڈیوٹی میں 40فیصد ، 1800سی سی سے اوپر گاڑیوں کی ڈیوٹی پر 100فیصد، موبائل فونز پرڈیوٹی دگنی کیئے جانے کا امکان ہے ۔موبائل فونز پر ڈیوٹی چھ ہزار سے 44 ہزار روپے تک ہونے کا امکان ہے ۔

یاد رہے کہ وزیر اعظم شہباز شریف کی زیر صدارت پر تعیش اشیا کی درآمد پر اجلاس ہو اجس میں وزیر اعظم نے غیر ضروری اشیا کی امپورٹ پر پابندی لگا دی،وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ غیر ضروری اور پرتعیش اشیا کی درآمد پر زرمبادلہ خرچ نہیں ہونے دیں گے۔

ادارہ شماریات کی جانب سے جاری کر دہ اعدادو شمار کے مطابق جولائی سے اپریل 2022 کے دوران ایک ارب 30 کروڑ ڈالر کی پاور جنریٹنگ مشینری درآمد کی گئی ، 10 ماہ میں دو ارب 37 کروڑ ڈالر کی آئرن سٹیل مصنوعات امپورٹ کی گئیں ، دس ماہ میں ایک ارب 81 کروڑ ڈالر کے موبائل فونز درآمد ہوئے ، امپورٹڈ ٹائرز پر 10 ماہ میں ایک کروڑ ڈالر سے زائد خرچ کیئے گئے ۔

مزید :

قومی -