پی ٹی آئی کارکنوں کی گرفتاریاں،متعدد رہنما جیل منتقل

 پی ٹی آئی کارکنوں کی گرفتاریاں،متعدد رہنما جیل منتقل

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


احمد پور شرقیہ،ڈیرہ غازیخان،کوٹ ادو ، کچاکھوہ (نامہ نگار،سٹی رپورٹر،تحصیل رپورٹر،نمائندہ پاکستان)ملک بھر میں پاکستان تحریک انصاف کے حالیہ احتجاج اور ہنگامہ آرائی کی وجہ سے کارکنان کی گرفتاریاں جاری ہیں گزشتہ دنوں کچاکھوہ کی معروف شخصیت لالا عالم(بقیہ نمبر40صفحہ7پر )
 خان نیازی کو مقامی پولیس تھانہ کچاکھوہ نے گرفتار کرلیا جس کو مبینہ طور پر بھکر جیل میں منتقل کر دیا گیا ہے انکشاف ہوا ہے کہ تیس دن کے لیے نظر بند کر دیا گیا ہے اہل علاقہ کے مطابق بزرگ سماجی کارکن ہے کسی بھی غیر قانونی سرگرمی میں ملوث نہ ہے محض سیاسی بنیادوں پر گرفتار کیا گیا ہے بیان کیا جاتا ہے کہ کئی کارکنان گرفتاری کے خوف سے رو پوش ہیںکوٹ ادو کے علاقہ بنگلہ ہنجرائی کے رہائشی رانا مبارک کا 17 سالہ نوجوان راشد علی جو سپیرئیر کالج کوٹ ادو میں ایف ایس سی کا طالب علم ہے، اور اس وقت Detention Order کے تحت 30 روز کے لئے جیل پہنچا ہوا ہے دوسری طرف 22 مئی کو اسکا پہلا پیپر ہے،اگر وہ رہا نہ ہوا تو اسکا مستقبل دا اور سال ضائع ہونے کا خدشہ ہے اس بارے لاہور ہائیکورٹ ملتان بنچ میں رٹ دائر کی گئی ہے جسکی تاریخ سماعت 22مئی مقرر ہے اور 22 مئی ہی کو اسکا پہلا پیپر ہے،پاکستان تحریک انصاف سے اسکا کتنا تعلق ہے یا احتجاج میں کتناشامل ہوا ۔ لیکن تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی گرفتاری کے بعد ہونے والے احتجاجی مظاہروں کے بعد شروع کیے گئے کریک ڈان میں اس نوجوان کو پولیس تھانہ دائرہ دین پناہ نے گرفتار کیا،،ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ کی جانب سے 3 ایم پی او کے تحت 30 دن کے لیے جیل بھیجنے کے آرڈر بھی جاری ہیں،اسکے اہلخانہ کے مطابق راشد علی کا تعلق پی ٹی آئی سے نہ ہے اور نہ ہی وہ احتجاج میں شامل ہوا،گھر کے باہر بیٹھا پڑھ رہا تھا کہ دائرہ پولیس کو جب کوئی نہ ملا تو اسے گرفتار کر کے لےگئےسیاسی درجہ حرارت اور انا کی تسکین کی خاطر ملک جو پہلے ہی معاشی تباہ اوردیوالیہ ہونے کے قریب تھا اب 9 مئی کے بعد تو حالات مزید ناگفتہ بہ ہورہے ہیں،راشد علی سمیت کتنے نوجوان سٹوڈنٹس کا تعلیمی مستقبل برباد ہونے کا خدشہ ہے۔مسلم لیگ ن کے رہنما سابق ڈپٹِی میئر شیخ اسرار احمد کی قیادت میں ڈیرہ غازیخان میں پاک فوج کی حمایت میں ایک ریلی نکالی گئی ریلی بلاک نمبر 5 سے شروع ہوکر صدر بازار تک اختتام پذیر ہوئی ریلی کے شرکاءنے پاک فوج زند ہ باد اورعمران خان کے خلاف شدید نعرہ بازی کی اور عمران خان کی گرفتاری پر ورکروں کی دہشت گردانہ عمل کی سخت مذمت بھی کی ریلی کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے سابق ڈپٹی میئر شیخ اسرار احمد، سابق چیئر مین بلدیہ شیخ لیاقت رفیق ،سابق کونسلر چوہدری محمد حنیف لڈو ،سابق کونسلر مرزا محمد افضل ،شیخ غلام مصطفی رنگو ،شیخ محمد جہانگیر،محسن حیات صدیقی،شیخ طاہر معراج و دیگرنے کہا کہ اس ملک کو ہر بحران سے پاک فوج نے ہی نکالا ہے اب بھی صرف چند غداروں کے علاوہ تمام محب وطن پاکستانی پاک فوج کے ساتھ کھڑے ہیں قاہدتحریک صوبہ بحالی بہاولپورکےامید وار ایم پی اے 254 صاحبزادہ فرخ رفیع عباسی کی قیادت میں پاک فوج کے حق میں ایک ریلی نکالی گئی ریلی فریدگیٹ سے شروع ہوکر ڈی سی افس تک اختتام پذید ہوی ریلی میں عنصرکمبوہ، حاجی قاسم خان عباسی، نعیم عالم عباسی تحصیل صدر مارخور ونگ، بشیر جویئہ ڈسٹرکٹ نائب صدرپاکستان پیپلز پارٹی بہاولپور،سینئر رہنما مسلم لیگ ن امیدوار MPA بلال بلوچ،ملک ظفر سینئر رہنما TJP،اقلیتی جماعت کے آصف بھٹی نائب صدر پاکستان مسیحا جنوبی پنجاب، انجمن تاجران کے نمائندے اور عوام کی کثیر تعداد نے شرکت کی ریلی کی قیادت کرتے ہوئے صاحبزادہ فرخ رفیع عباسی نے کہا کہ پاکستانی فوج دنیا بھر میں اپنا ایک مقام رکھتی ہے اور کئی بار پاکستانی فوج کے دستے دوسرے ممالک میں بھی اپنا لوہا منوا کر واپس آتے ہیں مگر افسوس کے اپنے ملک پاکستان میں ایسے ناسور جو اپنی ہی پاک فوج پر من گھڑت الزامات لگاتے ہیں جو کہ ایک گھنانا عمل ہے۔