چاکلیٹ کے دیوانوں کے لیے انتہائی بری خبر،کچھ ہی وقت باقی

چاکلیٹ کے دیوانوں کے لیے انتہائی بری خبر،کچھ ہی وقت باقی
چاکلیٹ کے دیوانوں کے لیے انتہائی بری خبر،کچھ ہی وقت باقی

  

  • جینیوا (نیوز ڈیسک) چاکلیٹ ایسی مزیدار چیز ہے کہ جسے دیکھیں اس کا دیوانہ نظر آتا ہے لیکن اب چاکلیٹ کی طلب اس حد تک بڑھ گئی ہے کہ اسے پورا کرنا ممکن نہیں ہوپارہا۔

    چاکلیٹ بنانے والی دنیا کی سب سے بڑی کنفیکشنری Barry Callebaut کا کہنا ہے کہ طلب رسد سے بڑھ رہی ہے اور 2020ءتک یہ بحران شدت اختیار کرجائے گا۔ چاکلیٹ کی پیداوار میں کمی کی وجہ سے قیمتوں میں بھی بے پناہ اضافہ ہورہاہے اور چاکلیٹ بنانے کیلئے درکار کوکا کی قیمت 2000 پاونڈ فی ٹن تک پہنچ گئی ہے جو کہ پچھلے 8سال کے دوران دو گنا اضافہ ہے۔

    سوئٹزرلینڈ کی یہ کمپنی چاکلیٹ بیچنے والی دنیا کی بڑی بڑی کمپنیوں اور بیکریوں کو سپلائی کا کام کرتی ہے اور اس کا کہنا ہے کہ چاکلیٹ کی فراہمی میں کمی اور طلب میں بے پناہ اضافے کا نتیجہ یہ ہوگا کہ قیمتیں بڑھ جائیں گی اور کمپنیاں چاکلیٹ میں پھل اور گری دار میوہ جات شامل کرنا شروع کردیں گی۔ کمپنی نے سال 2013-14 میں 1.7 ملین ٹن چاکلیٹ سپلائی کیا ہے جو کہ پچھلے سال کی نسبت 11.7 ٹن زیادہ ہے۔

    چاکلیٹ کی پیداوار میں کمی کی وجوہات میں کوکا کے پودوں کی بیماریاں، افریقی ممالک کے خراب معاشی حالات اور حال ہی میں ایبولا وائرس کی وجہ سے مغربی افریقہ میں ہونے والی اکھاڑ پچھاڑ بھی شامل ہے ۔

  • چاکلیٹ میں سور کی چربی کی ملاوٹ کا انکشاف، جاننے کے لئے کلک کریں

مزید :

ڈیلی بائیٹس -