تحریک انصاف کی دستاویزات جھوٹ، مسترد کر دی جائیں، وزیراعظم کے بچوں کی سپریم کورٹ میں درخواست

تحریک انصاف کی دستاویزات جھوٹ، مسترد کر دی جائیں، وزیراعظم کے بچوں کی سپریم ...
تحریک انصاف کی دستاویزات جھوٹ، مسترد کر دی جائیں، وزیراعظم کے بچوں کی سپریم کورٹ میں درخواست

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) سپریم کورٹ میں پانامہ لیکس سے متعلق زیر سماعت کیس میں وزیراعظم کے بچوں حسن نواز، حسین نواز اور مریم نواز نے متفرق درخواست دائر کرتے ہوئے عدالت سے استدعا کی ہے کہ تحریک انصاف کی جانب سے کیس میں جمع کردہ 686 صفحات پر مشتمل دستاویزات کی کوئی قانونی حیثیت نہیں اس لیے انہیں غیرضروری قرار دیتے ہوئے مسترد کیا جائے۔

اکرم شیخ کے ذریعے دائر درخواست میں چیئرمین پی ٹی آئی کو فریق بناتے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ پی ٹی آئی کی جانب سے پانامہ معاملے پر جمع کردہ دستاویزات مخص کاغذ کے ٹکڑے اور جھوٹ کا پلندہ ہیں، ان دستاویزات میں کوئی ٹھوس شواہد پیش نہیں کئے گئے، جبکہ عدالت خود بھی ان دستاویزات کو غیر ضروری قرار دے چکی ہے اس لیے استدعا ہے کہ ان دستاویزات کو مستردکیا جائے۔سپریم کورٹ میں پانامہ لیکس سے متعلق زیرسماعت کیس میں بدعنوانی کے مرتکب تمام افراد کیخلاف بلاامتیاز قانونی کارروائی کے لئے متفرق درخواست دائر کر دی گئی۔

کس نے کہا کہ صرف وزیر اعظم کا احتساب ہو رہا ہے : سپریم کورٹ

ضرور پڑھیں: سوچ کے رنگ

ایڈووکیٹ طارق اسد کی درخواست میں وفاقی حکومت، وزارت داخلہ و دیگر کو فریق بنایا گیا ہے اور موقف اختیار کیا گیا ہے کہ صرف وزیراعظم کیخلاف کیس کی سماعت کرنا امتیازی سلوک ہے، کیونکہ پانامہ لیکس میں عمران خان، جہانگیر ترین، پرویز مشرف، رحمان ملک، سیف اللہ اور دیگر کے نام بھی شامل ہیں لہٰذا ان کیخلاف بھی کیس چلایا جائے۔ نواز شریف اور ان کے اہل خانہ کا مقدمہ ترجیحی بنیادوں پر جلد از جلد نمٹایا جائے۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ منگل کو طارق اسد کی جانب سے دائر اسی نوعیت کی درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے پہلے ہی خارج کر چکی ہے۔

مزید : اسلام آباد