بھارتی اشتعال انگیزیاں اور جنرل راحیل شریف کی کھری باتیں

بھارتی اشتعال انگیزیاں اور جنرل راحیل شریف کی کھری باتیں

آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے خبر دار کیا ہے کہ پاکستان کے خلاف بھارت کسی بھی قسم کی جارحیت سے باز رہے۔ ہمارے شہیدوں کا خون کبھی رائیگاں نہیں جائے گا۔ پاکستان کا دفاع ناقابلِ تسخیر ہے۔ انہوں نے لائن آف کنٹرول پر بھارت کی اشتعال انگیزیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی حکمرانوں کو مردوں کی طرح اپنے فوجیوں کی ہلاکتوں کے بارے میں حقیقت بیان کرنی چاہئے۔ حالیہ بھارتی اشتعال انگیزی کی وجہ سے ہمارے سات جوان شہید ہوئے، جبکہ پاکستانی فوجیوں کی جوابی کارروائی کے نتیجے میں بھارت کے گیارہ فوجی ہلاک ہوئے اور ان کے مورچوں کوبھی تباہ کر دیا گیا۔ مودی سرکار نے یہ بات میڈیا سے چھپائی۔ آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے بھارتی اشتعال انگیزیوں پر قومی امنگوں کے مطابق بروقت رد عمل دیا ہے۔ بھارت ہر محاذپر منہ کی کھا کر راہِ فرار اختیار کرتا ہے مودی سرکار نے محض بے بنیاد اور جعلی ’’کارروائیاں‘‘ کر کے اپنے مذموم مقاصد حاصل کرنے کی پالیسی اختیار کر رکھی ہے۔ نئی دہلی سے وردی میں بھی ہلاکتوں کا اعتراف نہیں کیا جاتا ہے جبکہ بھارت پاکستانی علاقے اور آزاد کشمیر کی شہری آبادیوں پر گولہ باری کر کے خوف و ہراس کی فضا پیدا کرنے کے لئے کوشاں رہتا ہے۔ بھارتی حکمرانوں کی اولین کوشش یہ ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں آزادی کا مطالبہ کرنے والے نہتے اور پُر امن کشمیریوں پر ہونے والے مظالم سے دنیا کو لاعلم رکھا جائے، اِسی لئے مختلف علاقوں پر روزانہ بلاوجہ فائرنگ اور گولہ باری کی جاتی ہے لیکن اب بھارتی عوام اور عالمی برادری ان تمام اوچھے ہتھکنڈوں سے اچھی طرح واقف ہو چکے ہیں، سرحدوں پر مودی سرکار کی اشتعال انگیزیوں کے جواب میں پاکستانی فوج کی طرف سے جو نقصان پہنچایا جاتا ہے، اس کا ذکر گول کر دیا جاتا ہے۔بھارتی حکمرانوں کو آہستہ آہستہ یہ بات سمجھ آرہی ہے کہ جارحیت سے کچھ نہیں ملے گا۔ اس حوالے سے پاکستان کے آرمی چیف جنرل راحیل شیریف نے درست تجزیہ پیش کر کے بھارتی حکمرانوں کو بجا طور پر آئینہ دکھایا ہے۔ ویسے تو تاریخ گواہ ہے کہ بھارت نے جب کبھی جارحیت کی غلطی کی ہے، اسے پاکستان کی مسلح افواج نے اپنی بہترین پیشہ وارانہ صلاحیتوں سے سبق سکھایا ہے۔ اب بھی بھارت کو یہ بات ذہن میں رکھنا ہوگی کہ بلا اشتعال سرحدی خلاف ورزیوں سے کچھ حاصل نہیں ہوگا۔ بھارتی اشتعال انگیزیوں کے جواب میں پاکستانی فوج کی طرف سے جتنا نقصان پہنچایا جاتا ہے، اس کے بارے میں مودی سرکار تو تفصیلات کو چھپاتی رہتی ہے لیکن ہمارے آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے انہیں چیلنج کیا ہے کہ بھارتی حکمران اپنے ہلاک ہونے والے فوجیوں کی تعداد بھی بتایا کریں اور اپنے فوجیوں کے مورچوں کی تباہی کے بارے میں بھی حقائق بیان کر دیا کریں۔

مزید : اداریہ