ااقوام متحدہ مکہ مکرمہ سمیت تمام مقامات مقدسہ کیخلاف اشتعال انگیزیوں کا سلسلہ روکے :او آئی سی

ااقوام متحدہ مکہ مکرمہ سمیت تمام مقامات مقدسہ کیخلاف اشتعال انگیزیوں کا ...

مکہ مکرمہ (سہیل چوہدری )او آئی سی نے مسلم امہ کے مقامات مقدسہ پر کچھ عرصہ قبل ہونے والے میزائل حملے جیسے آئندہ واقعات کو روکنے کی خاطر عملی اقدامات اٹھانے کیلئے رکن ممالک پر مشتمل ایک ورکنگ گروپ کی تشکیل دیتے ہوئے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ کو اس فورم سے پیغام دیا ہے کہ آئندہ مکہ مکرمہ سمیت دیگر مقامات مقدسہ پر اشتعال انگیزیوں کے تسلسل کو فوری روکنے کیلئے ضروری اقدامات کرئے اور ایسے واقعات نہ دھرائے جانے کو یقینی بنائے ، اس امر کا اظہار گزشتہ روز او آئی سی کے وزرائے خارجہ کے مکہ مکرمہ میں ہونے والے غیر معمولی اجلاس میں متفقہ قرداداروں میں کیا گیا ، اجلاس میں 50سے زائد ارکان نے شرکت کی جبکہ ایران اور بعض افریقی ممالک اجلاس میں نہیں شریک ہوئے ، ان قرداردادوں میں فیصلہ کیا گیا کہ ممبر ممالک پر مشتمل ورکنگ گروپ فوری طور پر عملی اقدامات کرئے،ایگزیکٹو کمیٹی نے رکن ممالک پرمشتمل یہ گروپ تشکیل دیا ہے اور ایگزیکٹیو کمیٹی کی جانب سے ہی اقوام متحدہ کو اس ضمن میں پیغام دیا گیا ہے ،پاکستان سے اجلاس میں مشیر خارجہ سرتاج عزیز شریک ہوئے، قرارداد میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ او آئی سی کے سیکرٹری جنرل اس اجلاس کی قراردادوں پر عمل درآمد کروائیں گے اور اپنی پیشرفت سے وزرائے خارجہ کے فورم کو کرینگے جبکہ قبل ازیں اجلاس کے شروع میں او آئی سی کے چارٹر کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے رکن ممالک کے داخلی مسائل میں عدم مداخلت کے اصول پر کار بند رہنے داخلی آزادی ،خود مختاری اور جغرافیائی وحدت پر یقین رکھنے پر زور دیا گیا جبکہ اسلام کی روح کے عین مطابق رکن ممالک کے باہمی تعلقات مشترکہ مفادات پر قائم کرنے ،سلامتی ،استحکام کیلئے اتفاق اور یکجہتی کیلئے اپنے عزم کو دھرایا گیا اور اسلام کی رحمت اللعالمین کی روح کے مطابق رویہ اپنانے پر زور دیا گیا جبکہ حوثی باغیوں کی جانب سے مکہ مکرمہ کو ہدف بناکر مقامات مقدسہ کی جانب میزائل حملہ اور ایسی مسلسل اشتعال انگیزیوں پر بات کرتے ہوئے انہیں ختم کرنے کی بات کی گئی ۔

مزید : صفحہ اول