پانی اور توانائی کی قلت زراعت ، صنعت اور قومی معیشت کے لیے خطرناک ہے:لیاقت بلوچ

پانی اور توانائی کی قلت زراعت ، صنعت اور قومی معیشت کے لیے خطرناک ہے:لیاقت ...
پانی اور توانائی کی قلت زراعت ، صنعت اور قومی معیشت کے لیے خطرناک ہے:لیاقت بلوچ

  

خانیوال(مانیٹرنگ ڈیسک)جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ پانی اور توانائی کی قلت زراعت ، صنعت اور قومی معیشت کے لیے خطرناک ہے۔

جماعت اسلامی پاکستان اور ملی یکجہتی کونسل کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے ڈسٹرکٹ بار خانیوال سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ملک اندرونی و بیرونی بحرانوں میں گھرا ہواہے ۔ اللہ نے پاکستان کو ہر نعمت ، وسائل اور بہترین انسانی صلاحیتوں سے نوازا ہے لیکن غیر ذمہ دارانہ رویوں ، انتشار اور مفاد پرستی نے عوا م کے لیے مسائل پیدا کردیے ہیں ۔ اسلامی نظریاتی کونسل آئینی اور تمام مسالک اور اعلیٰ تعلیم کے ماہرین کا ادارہ ہے ۔ اسلامی نظریاتی کونسل کی بحث کو تو بہت نمایاں کیا جاتاہے لیکن حکمران کونسل کی سفارشات پر عملدرآمد کرنے کے لیے تیار نہیں ۔ کونسل کی سفارشات اسی وقت عمل میں آتی ہیں جب حکومت اقدامات اور قانون سازی کرے ۔

انہوں نے کہاکہ کرپشن ام المسائل ہے ۔ سپریم کورٹ یقیناً پانامہ لیکس کرپشن اور ملک میں سرطان کی طرح کرپشن کے خاتمے کے لیے روڈ میپ دے گی لیکن ملک کو کرپٹ مافیا اور کرپٹ نظام سے نجات کے لیے عوام ، معاشرہ کے موثر طبقات اور سول سوسائٹی نے کردار ادا کرناہے ۔ جماعت اسلامی عوام کے جذبات کی ترجمان ہے ۔ عوام جماعت اسلامی کا ساتھ دیں گے تو ملک بحرانوں سے نجات پائے گا۔

حامد خان نے پاناما کیس میں پی ٹی آئی کی پیروی سے معذرت کرلی، پی ٹی آئی کا اعتزاز احسن سے رابطہ

انہوں نے کہاکہ صوبوں میں اضلاع کی حدود تو چھوٹی کی جاتی ہیں لیکن بڑے صوبے عوام کو صوبائی حقوق انصاف کے ساتھ نہیں دے رہے اسی لیے صوبوں اور صوبوں کے اندر تعلقات کی کشیدگی اور محرومیاں بڑھتی جارہی ہیں ۔ سیاسی، جمہوری ، سماجی اور دانشور قوتوں کو سنجیدگی سے عوامی مسائل پر غور کرنا ہوگا ۔ پانی اور توانائی کی قلت زراعت ، صنعت اور قومی معیشت کے لیے خطرناک ہے ۔ توانائی کے متبادل ذرائع مہنگے ہیں ، ہائیڈل پاور اور پانی کی قلت دور کرنے کے لیے ڈیموں کی تعمیر ہی مسائل کا حل ہے ۔لیاقت بلوچ سے وہاڑی میں علمائے کرام ، تاجر رہنماﺅں اور کسان نمائندوں نے بھی ملاقات کی ۔

مزید : قومی