قرضے اتارنے کیلئے قومی پالیسی تیار کی جائے‘ پرویزحنیف 

قرضے اتارنے کیلئے قومی پالیسی تیار کی جائے‘ پرویزحنیف 

  



لاہور(این این آئی) چیئر پرسن کارپٹ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ، سابق صدر لاہورچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری پرویز حنیف کہاہے کہ معیشت کودلدل سے نکال کرپائیدار بنیادیں فراہم کرنے اور قرضے اتارنے کیلئے سیاسی وابستگیوں سے بالاتر ہوکرقومی پالیسی تشکیل دے کر دستاویز تیارکی جائے،قرضوں کے بوجھ تلے دبا ہوا ملک کیسے ابھرتی ہوئی معیشتوں میں شامل ہو سکتا ہے،میڈ ان پاکستان کے سلوگن کی تشہیر کی جائے۔ملاقات کیلئے آنے وفد سے گفتگوکرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مصنوعی پالیسیوں کاخاتمہ اچھا اقدام ہے، ڈالر کومصنوعی طریقے سے منجمد کرنے کی وجہ سے ہماری معیشت کو بے پناہ نقصان ہوا اور اس کاخمیازہ ہماری معیشت کوبھگتناپڑے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سیاست ضرورکی جائے لیکن یہ پاکستان کی قیمت پر نہیں ہونی چاہیے،اگر پاکستان ہے تو سب کی سیاست بھی ہے اور اگر خدانخواستہ پاکستان کمزورہوتا ہے تو کسی کی سیاست بھی نہیں رہے گی۔ معیشت کی پائیدار ترقی اورغیر ملکی قرضے اتارنے کیلئے سر جوڑ کر بیٹھا جائے اور متفقہ قومی پالیسی تیار کر کے اسے دستاویزی شکل میں قوم کے سامنے لایا جائے۔ جب تک ہم قرضوں کے اژدھا کے پنجوں سے خودکو آزادنہیں کرالیتے پاکستان کا آگے بڑھنا مشکل ہے،ہمیں اپنی معیشت کی ترقی کے ساتھ ساتھ قرض اتارنے کی بھی پالیسی لانا ہو گی۔

 پرویز حنیف نے کہاکہ حکومت ہر سال لاکھوں افراد کو روزگارفراہم نہیں کر سکتی اس کے لئے نجی شعبے کی گروتھ ضروری ہے،حکومت ہنرسکھانے والے اداروں کی معاونت کرے تاکہ نوجوان جدید ہنر سیکھ کراپنے ملک میں یا بیرون ملک روزگار کمانے کے قابل ہو سکیں۔

مزید : کامرس