بھارتیوں کی بڑی تعداد پاکستانی ڈرامے دیکھتی ہے، فاطمہ علی

  بھارتیوں کی بڑی تعداد پاکستانی ڈرامے دیکھتی ہے، فاطمہ علی

  



لاہور(فلم رپورٹر)ٹک ٹاک سے شہرت حاصل کرنے والی اداکارہ و ماڈل فاطمہ علی نے کہا کہ بھارت میں بسنے والے لوگوں کی بڑی تعداد اب پاکستانی ڈرامہ دیکھتے ہیں اوران کی جانب سے پسندیدگی اورنیک تمنا ؤ ں کے پیغامات سوشل میڈیا کے ذریعے مجھ تک پہنچتے رہتے ہیں، جن کو دیکھ کر خوشی ہوتی ہے۔فاطمہ علی نے کہا کہ بالی ووڈ میں فلمسازی کا اپنا کلچرہے اوروہاں پر کام کرنے والی اداکارائیں اس کے مطابق بولڈ سین فلماتی اورملبوسات کا انتخاب کرتی ہیں جبکہ مجھے ایسے کردارکرنے کا کوئی شوق نہیں جس سے میرے کام کوپسند کرنے والے ناظرین کومایوسی کا سامنا کرنا پڑے۔فاطمہ علی نے کہا کہ میں شوبز سے وابستہ ضرورہوں لیکن مجھے اپنی حدود کا بخوبی اندازہ ہے، اس لئے میں اس طرح کی آفرزکوقبول نہیں کروں گی

، جومیرے مزاج کے خلاف ہوں۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانی فلموں کا معیارانتہائی اچھا اورعمدہ ہے، اس لئے اب تواپنے ملک سے دورجانے کی ضرورت ہی نہیں ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ فلم کی کامیابی اورفلاپ ہونا ایک ایسا عمل ہے جس پرکسی کا کنٹرول نہیں۔انہوں نے کہاکہ پاکستان فلم انڈسٹری کا نیا اوربہترین دور شروع ہوچکا ہے۔ پڑھے لکھے نوجوانوں نے پاکستان فلم انڈسٹری کی باگ دوڑسنبھال لی اور یہی وہ لوگ ہیں جوبہت جلد پاکستان کا نام انٹرنیشنل مارکیٹ میں روشن کریں گے۔فاطمہ علی نے کہا کہ ٹی وی ڈراموں میں حقیقت کے قریب کردار نبھانے پرناظرین کا پیار اکثر آٹ ڈور شوٹنگزپر ملتا رہتا ہے۔ ایک فنکارکی کامیابی کا اصل ایوارڈ لوگوں کا پیارہی ہوتا ہے۔ جہاں تک بات پاکستانی ڈراموں کی بیرون ممالک مقبولیت کی ہے توہمارے ڈراموں نے بھارت میں دھوم مچارکھی ہے۔

مزید : کلچر