اسلام آباد کے نجی ہسپتالوں میں زائد المیعاد ادویات فروخت کئے جانے کا انکشاف

اسلام آباد کے نجی ہسپتالوں میں زائد المیعاد ادویات فروخت کئے جانے کا انکشاف

  



 اسلام آباد (این این آئی)اسلام آباد کے پرائیوٹ ہسپتال اپنے ہی میڈیکل اسٹور پر زائد المعیاد ادویات فروخت کرنے میں ملوث ہیں۔ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی (ڈریپ) نے مذکورہ انکشاف اپنی انکوائری رپورٹ میں کیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق رواں ماہ کی 8 تاریخ کو ڈریپ کی رپورٹ میں کہا گیا کہ اسلام آباد کے معروف پرائیوٹ ہسپتالوں میں دوران تفتیش انکشاف ہوا کہ ان طبی مراکز میں زائد المعیاد ادویات فروخت ہورہی ہیں۔فیڈرل انسپکٹر آف ڈرگس مہوش انصاری کی تیار کردہ رپورٹ کے مطابق اگرچہ کچھ ادویات تیار کرنے اور ختم ہونے کی تاریخوں میں بیچ کے نمبر تبدیل کردیے گئے تھے جس سے معلوم ہوا ہے کہ ادویات زائد المعیاد ہوگئی تھیں۔ مذکورہ پورٹ متعلقہ فورم کو پیش کی جائے گی جس کے بعد ذمہ داران کے خلاف قانونی کارروائی ہوگی۔ایڈیشنل ڈائریکٹر کوالٹی ڈریپ عبد الستار سورانی نے نجی ٹی و ی کو بتایا کہ انکشاف ہوا ہے کہ 2015 کے بعد بھی ہسپتالوں نے بوگس رسیدوں سے دوائیں خریدی تھیں۔ دوائیوں کے بیچ نمبروں سے معلوم ہوا کہ کچھ دوائیں ختم ہوگئیں لیکن تاریخوں میں تبدیلی کے بعد بھی فروخت کی جارہی ہیں۔برسوں کے دوران ڈریپ نے ایک ایسا نظام تیار کیا ہے جس کے تحت اب ہم ایسی شکایات پر سخت کارروائی کرتے ہیں۔

ڈریپ رپورٹ

مزید : صفحہ آخر