نواز شریف،کل لندن روانگی کا امکان،وزراء کا عدالتی فیصلہ نامنظور من مانی تشریح کرنا توہیں عدالت کے مترادف:مسلم لیگ (ن)

نواز شریف،کل لندن روانگی کا امکان،وزراء کا عدالتی فیصلہ نامنظور من مانی ...

  



اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک ،این این آئی)پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہاہے کہ حکومتی وزراء عدالتی فیصلے کی من مانی تشریح کر کے توہین عدالت کر رہے ہیں،محمد نواز شریف کی سزا تمام کیسز میں معطل ہے،حکومت اپنی حکومتی حد میں رہے عدالت نہ بنے،انشاء اللہ محمد نواز شریف  کل منگل کو علاج کیلئے بیرون ملک جائیں گے اور صحت یاب ہونے کے بعد وطن واپسی پر ان کا شاندار استقبال کریں گے۔ اتوار کو ا انہوں نے کہاکہ وزراء نے پریس کانفرنس میں پیغام دیاکہ انہیں عدالتی فیصلہ قبول نہیں،محمد نواز شریف کی سزا تمام کیسز میں معطل ہے،تمام مقدمات میں محمد نواز شریف کی سزا عدالت معطل کرچکی ہے،اعلیٰ عدلیہ نے سزا معطلی کے فیصلہ میں تحریر کیا ہے کہ بادی النظر میں محمد نواز شریف کو دی گئی سزا غلط ہے،حکو۔ انہوں نے کہاکہ وزراء عدالتی فیصلے کی غلط تشریح و تعبیر کرکے ڈھٹائی اور بے شرمی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ عدالتی فیصلے میں یہ بھی لکھا ہے کہ جس شخص کی سزا اعلی عدلیہ معطل کر چکی ہو،اس میں حکومت مداخلت کرکے کوئی شرط اوراس کا نام ای سی ایل میں نہیں ڈال سکتی۔انہوں نے کہاکہ عدالت نے شرط نہیں لگائی تھی تو پھر حکومت نے عدالت بننے کی کوشش کیوں کی؟،حکومت نے عدالت کا اختیار استعمال کرنے کی ناکام کوشش کی۔ انہوں نے کہاکہ اللہ تعالی نے ان کے ہاتھ میں کسی کے لئے خیر نہیں رکھی تو کم ازکم منہ ہی بند کر لیں تاکہ مزید رسوائی سے بچ سکیں،کابینہ کو غور کرنا چاہیے کہ وزیراعظم کی نالائقی اور نااہلی کا کیا علاج ہے؟۔ انہوں نے کہاکہ کابینہ کو غور کرنا چاہیے کہ ٹماٹر کی قیمت ڈالر سے زیادہ کیوں ہے؟،حکومت کو شرم آنی چاہیے کہ وہ ٹماٹر ڈالر سے مہنگا ہوگیا ہے،کابینہ کو غور کرنا چاہیے کہ ایک سال میں میں تاریخی 11 ہزار ارب سے زیادہ قرضہ کیوں لیا؟۔ انہوں نے کہاکہ کابینہ کو غور کرنا چاہیے کہ ایک سال میں ترقی کی شرح آدھی اور مہنگائی 14فیصد کیوں ہوئی؟،کابینہ غورکرے کہ گیس کی قیمت 200 فیصد اور بجلی کی قیمت 50 فیصد  کیوں بڑھائی؟،کابینہ غورکرے کہ پاکستان میں آج روٹی، روزگار، کاروبار، دوکان، فیکٹری اور صنعت کیوں بند ہے؟،کابینہ غور کرے کہ عوام کو ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھر حکومت کب دے گی؟، کابینہ غور کرے کہ اس نے قوم کے ساتھ اتنے جھوٹ کیوں بولے؟۔ انہوں نے کہاکہ کابینہ غور کرے کہ قوم مہنگائی، بے روزگاری اور بدترین معاشی حالات سے دوچار ہے اور نااہل وزیراعظم چھٹی پر چلے گئے ہیں،کابینہ غورکرے کہ الیکشن کمیشن میں فارن فنڈنگ چوری کے کیس میں جواب کیا دینا ہے؟،22 کروڑ عوام کی دعاؤں کے سائے میں منگل کو محمد نواز شریف کو بیرون ملک علاج کے لیے الوداع کہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ انشاء اللہ محمد نواز شریف کے صحت یاب ہونے کے بعد وطن واپسی پر ان کا شاندار استقبال کریں گے،حکومت محمد نواز شریف اور شہباز شریف سے حسد کے بجائے عوام کی خدمت پر توجہ دے۔دریں اثنا محمد نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنا ن نے کہاہے کہ نوا زشریف علاج کیلئے 48گھنٹے کے اندر بیرون ملک روانہ ہوں گے،طبی طورپر مستحکم ہوتے ہی نوازشریف لندن کے لئے روانہ ہوجائیں گے۔ ٹوئٹر پر بیان میں ڈاکٹر عدنان نے کہا کہ نوازشریف مکمل طبی سہولتوں کے ساتھ سفر کے لئے روانہ ہوں گے،میڈیکل ٹیم بھی نوازشریف کے ساتھ ہو گی،نواز شریف کا سفر ان کی حالت بہتر ہونے سے مشروط ہے،نواز شریف تمام سہولیات اور میڈیکل سٹاف سے آراستہ ائیر ایمبولینس میں سفر کریں گے۔ادھرعدالتی حکم کے بعد نوازشریف کی اڑان بھرنے کی تیاری جاری ہیں، منگل کو لندن روانگی کا پروگرام بن گیا۔ علاج کے انتظامات مکمل کر لئے گئے، ہارلے سٹریٹ کلینک میں ڈاکٹروں سے وقت  بھی لے لیا گیا۔نوازشریف کو لندن لے جانے کیلئے قطر سے ایئرایمبولنس آئے گی، سابق وزیراعظم کو سفر کے قابل بنانے کیلئے ادویات میں ردوبدل کر لیا گیا، پلیٹ لیٹس کے چاربیگ رکھے جائیں گے، پرواز کا دورانیہ تقریبا چھ گھنٹے ہوگا۔ادویات کے بعد طبیعت بہتر ہوتے ہی نوازشریف لندن روانہ ہو جائیں گے،  دریں اثناقومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی پاکستان میں غیر موجودگی میں مسلم لیگ ن ان کا مشن جاری رکھے گی۔شہباز شریف نے نواز شریف کے لیے نیک جذبات اور ہمدردی پر ق لیگ اور ایم کیو ایم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ چوہدری شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الٰہی سمیت حکومت کی دیگر اتحادی جماعتوں کے شکر گزار ہیں کہ انہوں نے نواز شریف کے لیے ہمدردی کا اظہار کیا۔شہباز شریف نے نواز شریف کی جلد صحتیابی کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کرنے پر چیئر مین سینیٹ صادق سنجرانی، اے این پی، پیپلز پارٹی اور اپوزیشن کی دیگر جماعتوں کا بھی شکریہ ادا کیا۔انہوں نے کہا کہ حکومتی اتحادیوں نے دشمنی کی سیاست کی بجائے مفاہمت اور انسانی بنیادوں کی سیاست کو فروغ دیا اور انسانی ہمدردی کی مخالفت کرنے والوں کی حوصلہ شکنی کی۔صدر مسلم لیگ ن نے کہا کہ میاں نواز شریف کی ملک و قوم کے لیے گراں قدر خدمات ہیں، نواز شریف کے لیے دعائیں کرنے پر 22 کروڑ پاکستانیوں کا بھی مشکور ہوں۔شہباز شریف نے کہا کہ مسلم لیگ ن نواز شریف کی پاکستان میں غیر موجودگی میں بھی ان کا مشن جاری رکھے گی۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر محمد شہباز شریف نے جاتی امراء رائے ونڈ میں اپنے بڑے بھائی محمد نواز شریف اور دیگر اہل خانہ سے ملاقات بھی کی۔ شہباز شریف نے نواز شریف کی عیادت کی جبکہ اس موقع پر ڈاکٹر عدنان نے نواز شریف کی صحت کی صورتحال کے حوالے سے شہباز شریف کو آگاہ کیا کیا۔ ر شہباز شریف نے جاتی امرا میں اپنے بڑے بھائی نواز شریف اور فیملی افراد سے ملاقات کرکے انھیں بیرون ملک روانگی سے متعلق لائحہ عمل سے آگاہ کیا،شہباز شریف نے باہر جانے کے معاملے پر شریف فیملی کے کیساتھ مشاورت کی اور انھیں بتایا کہ اس سلسلے میں تمام انتظامات مکمل ہیں۔ انہوں نے فیملی افراد کو انتظامات سے آگاہ کیا۔شہباز شریف نے تیمارداری کے دوران میاں نواز شریف سے کہا کہ آپ کا علاج میری ذمہ داری ہے۔ اللہ کی مہربانی سے ہمیں عدالتی فیصلے کے نتیجے میں ریلیف ملا۔

 نواز شریف روانگی

مزید : صفحہ اول