طلاق یافتہ مرد مردانہ کمزوری کا زیادہ نشانہ بنتے ہیں، ماہرین نے انتہائی حیران کن وجہ بھی بتادی

طلاق یافتہ مرد مردانہ کمزوری کا زیادہ نشانہ بنتے ہیں، ماہرین نے انتہائی ...
طلاق یافتہ مرد مردانہ کمزوری کا زیادہ نشانہ بنتے ہیں، ماہرین نے انتہائی حیران کن وجہ بھی بتادی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) اس بات سے ہم آگاہ ہیں کہ فحش فلمیں ذہنی و جسمانی صحت پر انتہائی منفی اثرات مرتب کرتی ہیں تاہم اب برطانیہ کے ایک ماہر نفسیات نے ان کا مردوں کے لیے مزید ایک ایسا سنگین نقصان بتا دیا ہے کہ سن کر کوئی مرد فحش فلمیں دیکھنے سے قبل دس بار سوچے گا۔ میل آن لائن کے مطابق فیلکس ایکونومیکس نامی اس ماہر کا کہنا ہے کہ طلاق یافتہ مرد سب سے زیادہ جنسی کمزوری اور عضو مخصوصہ کی ایستادگی کے مسئلے کا شکار ہوتے ہیں اور اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ ایسے مرد اپنی جنسی زندگی سے غیرمطمئن ہو جاتے ہیں اور یہی وہ مرد ہوتے ہیں جو سب سے زیادہ فحش فلموں کی لت میں مبتلا ہوتے ہیں۔یہ عوامل ان میں عضو مخصوصہ کی ایستادگی کے سنگین مسئلے کا موجب بنتے ہیں۔

برطانیہ کے ادارے نیشنل ہیلتھ سروسز میں 8سال تک فرائض سرانجام دینے والے فیلکس ایکونومیکس کا کہنا تھا کہ ”میرے کلینک پر جتنے بھی طلاق یافتہ مرد آتے ہیں ان میں سے 80فیصد سے زائد عضو مخصوصہ کی ایستادگی کے مسئلے کا شکار ہوتے ہیں اور جب میں ان سے ان کی عادات کے بارے میں استفسار کرتا ہوں تو دو چیزیں جو ان میں مشترک ہوتی ہیں وہ یہی ہوتی ہیں کہ ایک تو وہ اپنی جنسی زندگی سے مطمئن نہیں ہوتے اور دوسرے وہ فحش فلمیں دیکھنے کی لت میں بری طرح مبتلا ہوتے ہیں۔اس مفروضے کو ذہن میں رکھتے ہوئے مارکیٹ ریسرچ سوسائٹی کے زیر انتظام ہم نے تحقیق کی اور اس تحقیق میں میرا مفروضہ درست ثابت ہوا۔ اس تحقیق میں ہم نے 1ہزار مردوں کی جنسی صحت، ان کی ازدواجی حیثیت اور ان کی عادات کے بارے میں سوالات پوچھے۔ ان میں 120طلاق یافتہ مرد تھے۔ نتائج میں معلوم ہوا کہ 85فیصد طلاق یافتہ مرد عضو مخصوصہ کی ایستادگی کے مسئلے کا شکار تھے اور یہ سب کے سب مذکورہ بری عادت میں مبتلا تھے۔ دوسرے مردوں میں یہ شرح دونوں حوالوں سے بہت کم تھی۔ وہ اس جنسی مسئلے کا بھی کم شکار تھے اور فحش فلموں کی لت میں بھی کم مبتلا تھے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس