2 لڑکوں سے بد فعلی کرنے والے ٹیچر کو نکالنے پر عدالت نے سکول انتظامیہ کو 14 کروڑ روپے کا جرمانہ کردیا

2 لڑکوں سے بد فعلی کرنے والے ٹیچر کو نکالنے پر عدالت نے سکول انتظامیہ کو 14 ...
2 لڑکوں سے بد فعلی کرنے والے ٹیچر کو نکالنے پر عدالت نے سکول انتظامیہ کو 14 کروڑ روپے کا جرمانہ کردیا

  



لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن)برطانیہ میں ایک عدالت نے 2 لڑکوں سے بد فعلی کرنے والے ٹیچر کو سکول سے نکالنے والی سکول انتظامیہ کو 14 کروڑ 17 لاکھ روپے کا جرمانہ عائد کردیا۔

پورٹ ٹالبوٹ کے سین فیلڈز میں میتھیو اپلن نامی ہیڈ ٹیچر پر الزام تھا کہ اس نے ایک ڈیٹنگ ایپلی کیشن کے ذریعے 2 کم عمر لڑکوں کے ساتھ رابطہ کیا اور ان کے ساتھ بد فعلی کی۔ سکول انتظامیہ کو جب اس واقعے کا علم ہوا تو اسے مئی 2016 میں سکول سے نکال دیا گیا۔

ہیڈ ٹیچر نے سکول انتظامیہ کے فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کیا جس نے میتھیو اپلن کی برطرفی کو نا انصافی قرار دیتے ہوئے اس کو 7 لاکھ پاﺅنڈ (تقریبا ً 14 کروڑ 17 لاکھ روپے ) جرمانہ عائد کردیا۔ ٹربیونل نے قرار دیا ہے کہ میتھیو اپلن کو بطور ہیڈ ٹیچر اپنی زندگی گزارنے کا پورا حق حاصل ہے اور انہیں اپنے حساب سے زندگی گزارنے دی جائے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس