’مولانا فضل الرحمان نے ایک ماہ کادھرنا دے دیا تو ۔۔۔ ‘ ارشاد بھٹی نے وزیر اعظم سے سوال پوچھ لیا

’مولانا فضل الرحمان نے ایک ماہ کادھرنا دے دیا تو ۔۔۔ ‘ ارشاد بھٹی نے وزیر ...
’مولانا فضل الرحمان نے ایک ماہ کادھرنا دے دیا تو ۔۔۔ ‘ ارشاد بھٹی نے وزیر اعظم سے سوال پوچھ لیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار ارشاد بھٹی نے کہاہے کہ عمران خان کہتے ہیں کہ مولانا فضل الرحمان ایک ماہ دھرنا دیدیں تو میں چھوڑ چلا جاﺅں گا، ان کو ایسا نہیں کہنا چاہئے ، اگر مولانا فضل الرحمان پھر آگئے اور ایک ماہ کا دھرنا دیدیا تو پھر کیا کریں گے ؟

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے ارشاد بھٹی نے کہا کہ میں حکومت اور عدالت سے کہتاہوں کہ جن کے پاس پیسہ ہوتاہے ان کو تو آپ سب کچھ دے دیتے ہیں لیکن ہمارے جیسے بھوکوں ننگوں کو یہیں علاج معالجے کی سہولیات دے دیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے بطور وزیر اعظم بات نہیں کی بلکہ بطور چیئر مین تحریک انصاف بات کی ہے ۔ عمران خان نے جس طرح شہباز شریف اور بلاول کو بھٹو کو پکاراہے کہ ان کواس طرح نہیں کہناچاہئے تھا ۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان دودن کی چھٹی کرکے آئے ہیں اور تازہ دم تھے ۔ اس لئے ان کی جانب سے اس طرح اپوزیشن کو للکار ا گیاہے ۔ عمران خان نے مولانا فضل الرحمان سے کہا کہ دھرنا دینا آسا ن نہیں ہے ، اگر مولانا فضل الرحمان ایک مہینہ دھرنا دے دیں تو میں چھوڑ کر گھر چلاجاﺅں گا لیکن ان کی یہ بات نہیں کرنی چاہئے تھی کیونکہ اگر مولانا فضل الرحمان نے ایک ماہ کیلئے دھرنا دیدیا تو پھر کیا کریں گے ؟

مزید : علاقائی /اسلام آباد