بی سی بی کا فاسٹ باﺅلر شہادت حسین پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ مگر کیوں؟ ناقابل یقین وجہ سامنے آ گئی

بی سی بی کا فاسٹ باﺅلر شہادت حسین پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ مگر کیوں؟ ...
بی سی بی کا فاسٹ باﺅلر شہادت حسین پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ مگر کیوں؟ ناقابل یقین وجہ سامنے آ گئی

  



ڈھاکہ (ڈیلی پاکستان آن لائن ) بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ (بی سی بی) نے نیشنل کرکٹ لیگ(این سی ایل) میں ڈھاکہ ڈویژن اور کھلنا ڈویژن کے درمیان میچ کے دوران لڑائی جھگڑا کرنے پر فاسٹ باﺅلر شہادت حسین پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

بی سی بی ٹورنامنٹ کمیٹی کے ایک افسر کا کہنا ہے کہ شہادت حسین کو الزام قبول کرنے کے بعد کھلنا سے واپس لایا جا چکا ہے۔ بی سی بی ایکٹ کے تحت لیول فورم کے جرم کا ارتکاب کرنے والے کھلاڑی پر ناصرف بورڈ کے زیر اہتمام منعقدہ ٹورنامنٹ میں شریک ہونے پر پابندی عائد کر دی جاتی ہے بلکہ اسے 50,000 بنگلہ دیشی ٹکہ جرمانہ بھی عائد کیا جاتا ہے۔ شہادت حسین نے اپنا جرم قبول کر لیا ہے اور ہم نے میچ ریفری کی رپورٹ بھی ٹیکنیکل کمیٹی کے سپرد کر دی ہے جو فاسٹ باﺅلر کے مستقبل کا فیصلہ کرے گی تاہم انہیں این سی ایل کے اگلے میچوں میں شرکت سے روک دیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ میچ کے دوران عرفات نے صرف اتنا کہا کہ شہادت حسین گیند کی ایک سائیڈ کو صحیح طرح نہیں چمکا رہے جس پر وہ برہم ہو کر عرفات پر حملہ آور ہو گئے جس پر کھلاڑیوں کو بیچ بچاﺅ کرانا پڑا اور اب ان پر ایک سال کی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ میچ ریفری اختر احمد کا کہنا ہے کہ ”میچ ریفری کے پاس شہادت حسین کو سزا دینے کا کوئی اختیار نہیں ہے۔ یہ ایک بڑا جڑم ہے کیونکہ یہ برے روئیے یا گالی جیسا نہیں ہے۔ انہوں نے اپنے ساتھی کھلاڑی کو مارا اور اب یہ معاملہ بی سی بی کے پاس چلا گیا ہے۔ بورڈ ہی ثبوت دیکھنے کے بعد انہیں سزا دینے سے متعلق کوئی فیصلہ کرے گا۔“

مزید : کھیل