سابق ڈی آئی جی جنیدارشد کی ضمانت بعدازاگرفتاری کی درخواست خارج

  سابق ڈی آئی جی جنیدارشد کی ضمانت بعدازاگرفتاری کی درخواست خارج

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے اہلیہ کی نازیبا تصاویر سوشل میڈیا پر شیئر کرنے کا مقدمہ میں سابق ڈی آئی جی سید جنیدارشد کی ضمانت بعدازاگرفتاری کی درخواست خارج کردی ایڈیشنل سیشن جج چودھری غلام رسول نے ملزم جنید ارشد کی درخواست ضمانت پر سماعت کی، سماعت شروع ہوئی تو سرکاری وکیل نے ضمانت کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ ملزم تفتیش میں گنہگار ہے، مقدمہ کا ٹرائل مکمل ہونیوالا ہے، ملزم ٹرائل میں تاخیری حربے استعمال کر رہا ہے، صفحہ مثل پر ملزم کیخلاف ٹھوس شواہد موجود ہیں، عدالت سے استدعاہے کہ ملزم کی ضمانت پر رہائی کی درخواست مسترد کی جائے، ملزم نے درخواست میں سابق اہلیہ عائشہ سبحانی اور ایف آئی اے کو فریق بنایاتھا۔
رخواست گزار کے وکیل کاموقف تھا کہ ایف آئی اے نے سوشل میڈیا پر عائشہ سبحانی کی تصاویر شیئر کرنے کا بے بنیاد مقدمہ درج کیا۔
 مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف درج کیا گیا اور ٹرائل کورٹ نے عبوری چالان پر شریک ملزم دانش غنی کو سزا بھی سنا دی تھی، سابق اہلیہ عائشہ سبحانی نے خاندانی مقدمے بازی کی رنجش میں جھوٹے مقدمہ میں ملوث کیا، عائشہ سبحانی مقدمہ درج کرواتے وقت درخواستگزار کے فیس بک اکاؤنٹس کے پاسورڈ جانتی تھی، ایف آئی اے سائبر کرائم سرکل نے درخواست گزار کیخلاف بلا جواز اور بلا اختیار انکوائری کی، ایف آئی اے نے عائشہ سبحانی کی نیک نیتی کا جائزہ نہیں لیا جبکہ مدعیہ اور ملزم درمیان مقدمہ بازی پہلے سے جاری تھی، عائشہ سبحانی درخواست گزار کو بلیک میل کرنے کیلئے 3 کروڑ روپے کا تقاضہ کر رہی تھی، ریکارڈ میں ظاہر ہے کہ درخواست گزار ملزم نے مدعیہ کو سوشل میڈیا کے ذریعے کوئی نازیبا میسج نہیں کیا، عدالت سے استدعاہے کہ سابق ڈی آئی جی جنید ارشد کر ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا جائے۔

مزید :

علاقائی -