ڈاؤ میں جگر کی پیوند کاری کے اخراجات حکومت برداشت کریگی: بلاول

ڈاؤ میں جگر کی پیوند کاری کے اخراجات حکومت برداشت کریگی: بلاول

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


       کراچی(نمائندہ خصوصی) وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری نے ڈا یونیورسٹی میں پانچ سو ملین روپے کی لاگت سے بنے نئے او پی ڈی بلاک کا افتتاح اور ڈا کینسر سینٹر کا سنگِ بنیاد رکھ دیا۔ وزیر خارجہ بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ وزیر اعلی سندھ کی جانب سے ڈا یونیورسٹی میں مستحق مریضوں کے 100 لیور ٹرانسپلانٹ مفت کئے جائیں گے، جن کے اخراجات حکومت پاکستان برداشت کرے گی، یہ بات انہوں نے گزشتہ روز وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کے ہمراہ ڈا یونیورسٹی لیور ٹرانسپلانٹ یونٹ کی جانب سے 75 سے زائد جگر کے ٹرانسپلانٹ کی تکمیل کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ قبل ازیں انھوں نے ڈا یونیورسٹی میں پانچ سو ملین (پچاس کروڑ) روپے کی لاگت سے تیار ہونے والے نئیاو پی ڈی کمپلیکس کا نقاب کشائی کرکے رسمی افتتاح کیا۔ بعد ازاں گاما نائف سینٹر سے متصل آنکالوجی سینٹر (کینسر سینٹر) کا سنگ بنیاد رکھا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ سندھ حکومت ہیلتھ پروفیشنل کو ہر وہ الانس دینے کو تیار ہے جو کسی اور صوبے میں دیا جا رہا ہے۔ سندھ میں سیلاب کے باعث جو تباہی آئی ہے اس کے اثرات ہر شعبے پر پڑے ہیں سندھ بجٹ پر اضافی مالی بوجھ بڑھا ہے جس کے باعث صوبے کے تمام ہی شعبوں  سے وابستہ افراد ان حالات کو سمجھیں۔ تقریب سے وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ، ڈا یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی، "سیاگ" کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ڈاکٹر سعد خالد نیاز، لیور ٹرانسپلانٹ یونٹ کے سربراہ ڈاکٹر جہانزیب حیدر و دیگر نے بھی خطاب کیا۔ میڈیا کے نمائندوں کی جانب سے آرمی چیف کی تقرری کے حوالے سے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ طویل عرصے سے غیر ضروری طور پر اس معاملے پر سیاست کی جارہی ہے یہ خالص سرکاری تقرری ہے جس کا طریقہ کار بھی طے شدہ ہے۔ اس پر نہ تو اپوزیشن کو نہ ہی حکومت کو کسی سیاسی جلسے میں بات کرنا چاہیئے۔ پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے لانگ مارچ کے حوالے سے سوال کے جواب میں بلاول بھٹو نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ صوبے اور ملک کے عوام کی پہلے سے بہتر خدمت کریں لیکن سڑکوں پر ہونے والے سیاسی تماشوں کے باعث ہمیں ان کا جواب دینا پڑتا ہے۔ جب کہ دنیا یہ طے کر چکی ہے کہ اب لڑائی جھگڑوں کے بجائے پارلیمنٹ میں معاملات طے ہوں گے۔ وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ حکومت سندھ نے پچاس لیور ٹرانسپلانٹ کے لیے ڈا کو مالی معاونت کا وعدہ کیا تھا لیکن انہوں نے نجی شعبے کے افراد کے تعاون سے اس رقم میں اضافہ کرکے 75 سے زائد یعنی 81 ٹرانسپلانٹ کر دیئے اور مزید ٹرانسپلانٹ ابھی ہو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نئے او پی ڈی کمپلیکس میں 56 کلینک ہوں گے جس کے نتیجے میں عام لوگوں کو علاج کی بہتر سہولیات میسر ہوسکیں گی۔ انہوں نے کہا کہ کینسر سینٹر میں حکومت سندھ کے تعاون سے ڈھائی ارب روپے کی مالیت سے ایم آر لائنیک نصب کی جا رہی ہے۔ انہوں نے نے بہترین علاج کی سہولتوں پر ڈا یونیورسٹی کی قیادت اور پوری ٹیم کو مبارکباد پیش کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈا یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی نے کہا کہ ڈا یونیورسٹی سندھ بھر میں میں وہ واحد یونیورسٹی ہے جو ورلڈ یونیورسٹی رینکنگ میں شامل ہوئی

مزید :

صفحہ اول -