اقلیتوں پر مظالم جاری رہے تو ہندوستان میں نیا پاکستان بنے گا،معصوم نقوی

اقلیتوں پر مظالم جاری رہے تو ہندوستان میں نیا پاکستان بنے گا،معصوم نقوی

لاہور (نمائند ہ خصوصی) جمعیت علما پاکستان نیازی کے سربراہ پیر سید محمدمعصوم حسین نقوی نے ایک بار پھر گائے کا گوشت کھانے کے الزام پر انتہا پسند ہندو تنظیم بجرنگ دل کی طر ف سے مسلمان ڈرائیور محمدنعمان کی شہادت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی سیکولرازم بے نقاب ہوچکاہے اقلیتوں پر اسی طرح مظالم جاری رہے تو ہندوستان میں ایک اور پاکستان جنم لے گا۔

میڈیا سے گفتگو میں پیر معصوم شاہ نقوی نے کہا کہ متعصب بھارتی حکومت انتہا پسندی کی تمام حدود پھلانگ کر دوسرے مذاہب پر ہندو ازم مسلط کرنے کے لیے ریاستی مشینری اور جبر استعمال کررہی ہے یہ عالمی قوانین کی خلاف ورزی اور مذہبی معاملات میں مداخلت ہے۔ عالمی برادری نوٹس لے ہریانہ کے وزیر اعلٰی کے بیان کہ گائے کا گوشت کھانے والے کی انڈیامیں جگہ نہیں کی شدید مذمت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مودی حکومت نے مسلمانوں سمیت دیگر اقلیتوں پر مظا لم کی انتہا کردی ہے۔ انہیں ہندومذہب قبول کرنے پر مجبور کیا جارہا ہے اسی لئے برصغیر کے مسلمانوں نے علیحدہ وطن کے قیام کی جدوجہد کی اورپاکستان دنیا کے نقشے پر نمودار ہواان کا کہنا تھا کہ اس سے پہلے عیدالاضحی کے موقع پر گائے کا گوشت پکانے کے جرم میں ایک مسلمان کی شہادت نے بھارت کی نام نہاد سیکولرازم کو بے نقاب کردیا تھا اب مسلمان ڈرائیور کو محض گائے اور بھینسیں لے جانے کے جرم میں موت کے گھاٹ اتار دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان ایک ظالم ریاست ہے ،سیکولر ہونے کے دعوے محض جھوٹ اور فریب ہے۔جے یو پی نیازی کے مرکزی صدر نے کہا کہ ہندوستان کے مسلمانوں کو مذہبی آزادیوں میں مداخلت سے اندازہ تو ہوگیا ہوگا کہ پاکستان کا قیام کتنا ضروری اور برو قت تھا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4