شام میں روسی فضائی حملے موثرثابت ہورہے ہیں، ولادیمیر پیوٹن

شام میں روسی فضائی حملے موثرثابت ہورہے ہیں، ولادیمیر پیوٹن

ماسکو (اے پی پی) روس کے صدر ولادیمیر پیوٹن نے شام میں داعش اور دیگر دہشت گرد گروپوں کے خلاف فضائی حملوں کو موثر قرار دیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق قزاخستان کے شہر بورو ووی میں سوویت یونین سے آزاد ہونے والے ملکوں کی تنظیم دولت مشترکہ کے سربراہی اجلاس سے خطاب میں انہوں نے کہاکہ شام میں دہشت گردوں کے خلاف روس کے فضائی حملے کامیاب اور موثر ہیں اور ان حملوں نے شام میں داعش کو کمزور کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شام میں داعش کے خلاف جنگ پوری ہم آ ہنگی کے ساتھ آگے بڑھ رہی ہے۔ روس کے صدر نے وسطی ایشیا کے دولت مشترکہ کے رکن ملکوں کے سربراہوں سے اپیل کی کہ علاقے میں دہشت گردوں کی آمد کو روکنے کے لئے ضروری اقدامات اور اپنی سرحدوں پر نگرانی بڑھا ئی جائے ۔ روس، قزاخستان، آذربائیجان، ارمنستان، بیلاروس، تاجکستان، کرغزستان اور مالودوا روسی دولت مشترکہ کے اراکین ہیں۔ روس کے صدر نے شام کے تعلق سے امریکا کی پالیسیوں کو بھی سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔

روس کے صدر نے کہا ہے کہ مغرب والوں نے اپنے غیر قانونی اہداف کے لئے اپنے عرب اتحادیوں کے ساتھ مل کر شام میں بحران اور خانہ جنگی کے حالات پیدا کئے اور اب مغرب والوں نے دیکھا کہ انہیں دہشت گرد گروہوں میں سے ایک ، داعش خود ان کے مفادات کے لئے خطرہ بن گیا ہے تو اس کے خلافے اتحاد بنایا، لیکن اس اتحاد کے اقدامات غیر موثر رہے ہیں۔ روسی صدر کا کہنا تھا کہ امریکی قیادت میں داعش مخالف اتحاد کی اسٹریٹیجی خطرات کی حقیقت اور ماہیت کے مطابق نہیں ہے اس لئے غیر موثر ہے۔

مزید : عالمی منظر