کانسٹیبلز سے لیکر ڈی پی اوز تک 80فیصد افسروں اور اہلکاروں کی تعیناتی کے پیچھے سفارشیں کارفرما

کانسٹیبلز سے لیکر ڈی پی اوز تک 80فیصد افسروں اور اہلکاروں کی تعیناتی کے پیچھے ...

  

 لاہور ر(رپورٹ۔ یو نس با ٹھ)پنجا ب کے مختلف اضلا ع میں کا نسٹیبل سے لیکر ڈی پی او تک 80فیصد اہلکا روں اور افسرو ں کی تعینا تی کے پیچھے سفا رشیو ں کے لمبے ہا تھ ہیں ۔20فیصد میں سے چند ایک میر ٹ کی بنیا د پر جبکہ با قی ما ند ہ معمو ل کے تبا د لو ں کی ضد میں آکر تعینا ت ہو تے ہیں۔اس حوا لے سے رو ز نا مہ پا کستا ن کی طر ف سے کی گئی تحقیقا ت کے مطا بق پنجا ب با لخصو ص صو با ئی دا رالحکو مت میں سنئیراور تجربہ کا ر انسپکٹر زکو نظر انداز کر کے سفا رش کے بل بوتے پرسب انسپکٹر ایس ایچ اوبننے لگے۔سب انسپکٹر ایس ایچ او شپ کے حصو ل کے لیے شہر کی سیا سی اور با اثر شخصیا ت کومبینہ طور پر 2سے 5لاکھ روپے دے کر تعینا تی حا صل کر لیتے ہیں جبکہ متعدد پو لیس افسر بھی ایس ایچ او لگوانے کے عو ض مبینہ طور پر رشو ت وصو ل کر رہے ہیں ۔ شہر میں لگنے والے سب انسپکٹر ایس ایچ اوز نے مبینہ طور پر تھا نو ں میں رشوت کا با زار گر م کر رکھا ہے اور ا نھیں اپنی کما ئی کا اڈہ بنا کر وہ 24گھنٹے پیسے کما نے کے چکر میں مصرو ف دکھائی دیتے ہیں ۔ان ایس ایچ او نے اپنے علا قو ں میں قمار بازی اور منشیا ت کے اڈ و ں کو کما ئی کا زریعہ بنا یا ہوا ہے اور شہر میں پو لیس کی نگرا نی میں 50سے زا ئد قمار با زی کے بڑے اڈے24گھنٹے اپنے گھنا ؤ نے جر م میں مصروف عمل ہیں ۔ غر یب آد می کا کو ئی پر سا ن حا ل نہیں ۔ رشو ت دیئے بغیر تھا نو ں میں مقدمات کے اندرا ج کا سوال ہی پیدا نہیں ہو تا ۔ شہر کے 84تھانوں میں سے 37سب انسپکٹر بطور ایس ایچ کا م کر رہے ہیں ما ڈ ل تھانوں میں بھی جہا ں اے ایس پی بطور ایس ایچ او لگا ئے جا نے تھے وہا ں بھی سب انسپکٹر ایس ایچ او بن بیٹھے ۔ سی سی پی او لا ہور کی نیک نیتی بھی پو لیس کے روایتی نظا م کو تبد یل نہ کر سکی اور محکمے میں افسر شاہی رشوت اور سفا رش نے نظا م کو تبا ہ کر کے رکھ دیا ہے۔ واضح رہے نئے پو لیس آرڈر کے مطا بق کسی بھی تھا نے میں انسپکٹر سے کم عہد ے کے افسر کو انچا رج نہیں بنا یا جا سکتا مگر یہا ں الٹی گنگا بہہ رہی ہے چند روز قبل آئی جی پو لیس پنجا ب نے بھی اعلا ن کیا تھا کہ پنجا ب بھر کے تھا نو ں میں تعینا ت بطور ایس ایچ اوسب انسپکٹر کو فو ر ی طو ر پر ہٹا یا جا رہا ہے مگر ایسا ممکن نہ ہو سکا اس وقت جوسب انسپکٹر بطور ایس ایچ او کا م کر ہے ہیں ان کی تفصیل کچھ یو ں ہے کہ سب انسپکٹر رضوان لطیف ایس ایچ او ریس کو رس ،سب انسپکٹر ممتاز احمد ،سب انسپکٹر وقاص الحسن،سب انسپکٹر تجمل حسین،سب انسپکٹر ارشد محمود ،سب انسپکٹر عامر سہیل کیفی ،سب انسپکٹر ناصر خان کوایڈیشنل ایس ایچ او بادامی باغ سے ایس ایچ او شاد باغ،سب انسپکٹر شبیر حسین کوایڈیشنل ایس ایچ او مصری شاہ سے ایس ایچ او مصری شاہ،سب انسپکٹر طاہر اکرام ، سب انسپکٹر انور سعید ،سب انسپکٹر آصف ذوالفقارکو ایڈیشنل ایس ایچ او لٹن روڈ سے ایس ایچ او نشتر کا لو نی ،سب انسپکٹر یاسر عباس کو ایڈیشنل ایس ایچ او مزنگ سے ایس ایچ او مزنگ،سب انسپکٹر رضوان الہی کو ایڈیشنل ایس ایچ او شالیمار سے ایس ایچ او شالیمار،سب انسپکٹر شہبا ز کو ایڈیشنل ایس ایچ اومغلپورہ سے ایس ایچ او مغلپورہ،سب انسپکٹر محمد علی بٹ کو ایڈیشنل ایس ایچ او ڈیفنس اے سے ایس ایچ او ڈیفنس اے ،سب انسپکٹر ماجد بشیر کو ایڈیشنل ایس ایچ او نارتھ کینٹ سے ایس ایچ او نارتھ کینٹ ،سب انسپکٹر محمد شاہد کو ایڈیشنل ایس ایچ او ہیئر سے ایس ایچ او ہیئر ،سب انسپکٹر ابرار حیدر کو ایڈیشنل ایس ایچ او ہڈیارہ سے ایس ایچ او ہڈ یارہ،سب انسپکٹر عبدالواحد کو ایڈیشنل ایس ایچ او ہربنس پورہ سے ایس ایچ او ہر بنس پورہ،سب انسپکٹر محمد اشفا ق کو ایڈیشنل ایس ایچ او نصیر آباد سے ایس ایچ او نصیر آباد ،سب انسپکٹر سہیل افتخا ر کو ایڈیشنل ایس ایچ او گارڈن ٹاؤن سے ایس ایچ او گارڈن ٹاؤن ،سب انسپکٹر اصغر علی،سب انسپکٹرخا لد کو ایڈیشنل ایس ایچ او اچھرہ سے ایس ایچ او اچھرہ ،سب انسپکٹر تنو یر احمد کو ایڈیشنل ایس ایچ او شادمان سے ایس ایچ او شادمان ،سب انسپکٹر ناصر حمید کو ایڈیشنل ایس ایچ اومسلم ٹاؤن سے ایس ایچ او سا ند ہ ،سب انسپکٹر قیصر عزیر کو ایڈیشنل ایس ایچ او وحدت کالونی سے ایس ایچ او وحدت کالونی،سب انسپکٹر محمد رضا کو ایڈیشنل ایس ایچ او اقبال ٹاؤن سے ایس ایچ او اقبال ٹاؤن ،سب انسپکٹر ادریس کو ایڈیشنل ایس ایچ اوگلشن اقبال سے ایس ایچ او گلشن اقبال،سب انسپکٹر حسین فاروق کو ایڈیشنل ایس ایچ اوگلشن راوی سے ایس ایچ او گلشن راوی،سب انسپکٹر حسن رضا کو ایڈیشنل ایس ایچ اوشیر اکوٹ سے ایس ایچ او شیراکوٹ ،سب انسپکٹرفا رو ق کو ایڈیشنل ایس ایچ او نواب ٹاؤن سے ایس ایچ او نواب ٹاؤن،سب انسپکٹرتیمور عبا س کوایڈیشنل ایس ایچ اوسبزازار سے ایس ایچ او سبز ہ زار،سب انسپکٹرآصف مجید کوایڈیشنل ایس او مصطفی ٹاؤن سے ایس ایچ او مصطفی ٹاؤن ،سب انسپکٹر محمد رمضان کو ایڈیشنل ایس ایچ اوجوہر ٹاؤن سے ایس ایچ او جوہر ٹاؤن اور سب انسپکٹر محمد سلیم کو ایڈیشنل ایس ایچ او گرین ٹاؤن سے بطور ایس ایچ او گرین ٹاؤن تعینات کیا گیا ہے ۔ ایک سب انسپکٹر جو بطور ایس ایچ او کا م کر رہا ہے اس نے اپنا نا م شا ئع نہ کر نے کی درخوا ست پر بتا یا ہے کہ ایس ایچ او شپ میر ٹ پر نہیں بلکہ اس کے حصو ل کے لیے اب تو بو لی دینی پڑ تی ہے ۔ شہر میں متعدد ایسے سیا سی گھر انے اور با اثر افراد موجود ہیں جو ایس ایچ او لگوانے کے عو ض مبینہ طور پر 2سے5لا کھ روپے تک حا صل کر تے ہیں اور ایسے ایس ایچ او پھر جا تے ہی اپنے پیسے پو رے کر نے کے لیے علا قے میں رشوت کا بازار گر م کر دیتے ہیں اور وہ جرا ئم کو کنٹرول کرنے کا آسان حل تلاش کر لیتے ہیں کہ وہ سنگین جرائم کے مقد ما ت ہی در ج نہیں کر تے جو تھا نو ں میں مقد ما ت در ج ہو تے ہیں وہ مبینہ طور پر رشوت کے بغیر درج نہیں کیے جا تے ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف کے مطابق یہ سب الزا م ہے ۔ایس ایچ او کی تعینا تی میر ٹ پر کی جا تی ہے ۔

مزید :

علاقائی -