کالا باغ ڈیم کبھی نہیں بنے گا ، ہمیشہ مخالف کی آئندہ بھی کرتا رہوں گا ، پرویز خٹک

کالا باغ ڈیم کبھی نہیں بنے گا ، ہمیشہ مخالف کی آئندہ بھی کرتا رہوں گا ، پرویز ...

  

 نوشہرہ ( آئی این پی ) وزیر اعلی خیبر پختونخوا پرویز خان خٹک نے کہا ہے کہ میں نے ہمیشہ کالاباغ ڈیم کی مخالفت کی اور آئندہ بھی کرتا رہوں گا کالاباغ ڈیم پر چاروں صوبوں کو اعتماد میں لیا جائے اور سب کو اعتماد میں لیکر اگر سارا ملک فیصلہ کرلے تو ہمارا صوبہ بھی فیصلہ کر لے گا۔کالاباغ ڈیم پر کبھی بھی اتفاق رائے نہیں بن سکتااس لئے یہ ڈیم کبھی بھی نہیں بنے گا عوامی نیشنل پارٹی کالاباغ ڈیم پر اپنی سیاست نہ چمکائے، میں نے لاہور میں بھی یہی بات کی تھی۔ بیرون ملک سرمایہ کاری کے لیے وفاق کی گارنٹی ضروری ہے اور وفاقی حکومت صرف پنجاب تک محدود ہے اسے چھوٹے صوبوں کی کوئی پرواہ نہیں مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں صوبے کے حقوق کیلئے بھرپور کردار ادا کیا ہے اور آئندہ بھی کرینگے دہشت گردی اورجنگ سے تباہ حال صوبہ خیبر پختونخواہ پر وزیر اعظم نواز شریف رحم کریں اور چاروں صوبوں کو یکساں ترقی کے مواقع فراہم کریں توانائی بحران کے خاتمے کیلئے اپنے محدود وسائل خرچ کر رہے ہے وفاقی حکومت بھاشا ڈیم منڈا ڈیم سمیت اہم 13منصوبوں میں سرمایہ کاری کرے پانی سے سستی بجلی بنائے ۔معلوم نہیں کہ وفاقی حکومت کوئلے فرنس ائل اورگیس سے مہنگی بجلی بنانے پر کیوں زیادہ توجہ دے رہی ہے وہ میڈیا سے بات چیت کر رہے تھے۔پرویز خٹک نے کہا کہ اے این پی اور ہمارے مخالفین کے پاس ہم پر انگلی اٹھانے کیلئے کوئی بات نہیں اس لئے وہ اپنی سیاست کو زندہ رکھنے کیلئے کوئی نہ کوئی شوشہ چھوڑ دیتے ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے ہمیشہ وفاق کو آج سے نہیں بلکہ ہم تو زمانے سے کہہ رہے ہے کہ ہمارے جو اعتراضات ہے نقصانات ہے اس کا کوئی حل بتا یا جائے اس کا کوئی حل ہے ہی نہیں تو کالا باغ ڈیم بن ہی نہیں سکتا توانائی بحران ختم کرنا وفاقی حکومت کا کام ہے ہم نے چائنہ اقتصادی راہداری منصوبے اور چین کے ساتھ ہونے والی سرمایہ کاری میں وفاقی حکومت کو پانی سے سستی بجلی بنانے کیلئے چترال ملاکنڈ سوات میں منڈا ڈیم سمیت 13منصوبوں کی نشاندہی کی ہے اور 13منصوبوں کی فیسیبلیٹی رپورٹ وفاق کو بھیجوادی ہے لیکن افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ وفاقی حکومت اس طرف توجہ نہیں دے رہی ہے ۔

مزید :

علاقائی -