کالاباغ ڈیم کبھی نہیں بنے گا ، اے این پی اپنی سیاست نہ چمکائے ، پرویز خٹک

کالاباغ ڈیم کبھی نہیں بنے گا ، اے این پی اپنی سیاست نہ چمکائے ، پرویز خٹک

  

 نوشہرہ(بیورورپورٹ) وزیر اعلی خیبر پختونخواہ پرویز خان خٹک نے کہا ہے کہ میں نے ہمیشہ کالاباغ ڈیم کی مخالفت کی اور آئندہ بھی کرتا رہوں گا کالاباغ ڈیم پر میری پارٹی پی ٹی آئی چاروں صوبوں کی رضا مندی اور کمیشن کی بات کرتی ہے چاروں صوبوں کو اعتماد میں لیا جائے اور سب کو اعتماد میں لیکر اگر سارا ملک فیصلہ کرلیں تو ہمارا صوبہ بھی فیصلہ کر لے گا۔کالاباغ ڈیم پر کبھی بھی اتفاق رائے نہیں بن سکتااس لئے یہ ڈیم کبھی بھی نہیں بنے گا عوامی نیشنل پارٹی کالاباغ ڈیم پر اپنی سیاست نہ چمکائے، میں نے لاہور میں بھی یہی بات کی تھی۔ بیرون ملک سرمایہ کاری کے لیے وفاق کی گارنٹی ضروری ہے اور وفاقی حکومت صرف پنجاب تک محدود ہے اسے چھوٹے صوبوں کی کوئی پرواہ نہیں مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں صوبے کے حقوق کیلئے بھرپور کردار ادا کیا ہے اور آئندہ بھی کرینگے دہشت گردی اورجنگ سے تباہ حال صوبہ خیبر پختونخواہ پر وزیر اعظم نواز شریف رحم کریں اور چاروں صوبوں کو یکساں ترقی کے مواقع فراہم کریں توانائی بحران کے خاتمے کیلئے اپنے محدود وسائل خرچ کر رہے ہے وفاقی حکومت بھاشا ڈیم منڈا ڈیم سمیت اہم 13منصوبوں میں سرمایہ کاری کرے پانی سے سستی بجلی بنائے ۔معلوم نہیں کہ وفاقی حکومت کوئلے فرنس ائل اورگیس سے مہنگی بجلی بنانے پر کیوں زیادہ توجہ دے رہی ہے وہ اپنے حلقے میں کاکاصاحب کے علاقے مینائی اور مانکی شریف میں تحریک انصاف کے دیرینہ کارکن افسرخان اور اطلس خان کے صاحبزداوں ظفر خان ، حیدر خان اورمحمد دوست خان کی دعوت ولیمہ کے موقع پر دئیے گئے استقبالیہ ، کارکنوں اور میڈیا سے بات چیت کر رہے تھے اس موقع پر سجادہ نشین پیر اف مانکی شریف پیرشمس الامین صوبائی وزیر میاں جمشید الدین کاکا خیل ضلع ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر عمران خٹک یونس ظہیر ، نوشہرہ لیاقت خان خٹک ضلع ناظم ، اور نائب ناظم اشفاق خان ضلع کونسلر نظام پور ذولفقار خٹک بھی موجود تھے پرویز خان خٹک نے کہا کہ میں ہمیشہ کالاباٖٖغ ڈیم کا مخالف رہا ہوں کہ کالاباٖغ ڈیم سے خیبر پختونخوا ہ کا واحد میدانی علاقے کے تین اضلاع نوشہرہ چارسدہ اور صوابی اورپشاور کا کچھ علاقہ متاثر ہو رہا ہے میں ذاتی طور پر روز اول سے کالاباغ ڈیم کی مخالفت کرتا چلا ارہا ہوں اور میں نے ہمیشہ انٹی کالاباغ ڈیم ریلیوں میں شرکت کی پرویز خٹک نے کہا کہ تحریک انصاف بھی چاروں صوبوں کی رضامندی اور کمیشن کی بات کر رہی ہے اور میں نے لاہور میں یہی بات کہی ہے پرویز خٹک نے کہا کہ اے این پی اور ہمارے مخالفین کے پاس ہم پر انگلی اٹھانے کیلئے کوئی بات نہیں اس لئے وہ اپنی سیاست کو زندہ رکھنے کیلئے کوئی نہ کوئی شوشہ چھوڑ دیتے ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے ہمیشہ وفاق کو آج سے نہیں بلکہ ہم تو زمانے سے کہہ رہے ہے کہ ہمارے جو اعتراضات ہے نقصانات ہے اس کا کوئی حل بتا یا جائے اس کا کوئی حل ہے ہی نہیں تو کالا باغ ڈیم بن ہی نہیں سکتا توانائی بحران ختم کرنا وفاقی حکومت کا کام ہے ہم نے چائنہ اقتصادی راہداری منصوبے اور چین کے ساتھ ہونے والی سرمایہ کاری میں وفاقی حکومت کو پانی سے سستی بجلی بنانے کیلئے چترال ملاکنڈ سوات میں منڈا ڈیم سمیت 13منصوبوں کی نشاندہی کی ہے اور 13منصوبوں کی فیسیبلیٹی رپورٹ وفاق کو بھیجوادی ہے لیکن افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ وفاقی حکومت اس طرف توجہ نہیں دے رہی ہے ان منصوبے کی تعمیر سے نہ صرف یہ خطہ سیلاب سے محفوظ ہو گا بلکہ نیشنل گریڈکو 12سے 13ہزار سے زائد میگاواٹ بجلی فراہم ہوگی پرویز خٹک نے کہا کہ ہم نے چھوٹے ڈیموں کی تعمیر کیلئے سرمایہ کاری کیلئے بات چیت شروع کی ہے بڑوں منصوبوں کیلئے وفاقی کی گارنٹی کا ضرورت ہے پرویز خٹک نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہمارے صوبے کے دو مسئلے ہے ایک امن و امان ہے اور دوسرا بجلی کا ہے جب سے فوج نے ضرب عضب اپریشن شروع کیا ہے اس کے بعد امن کی صورت حال میں بہتری ائی ہے صوبائی حکومت فوج کے ساتھ بھرپور تعاون کر رہی ہے اور خیبرپختون خوا پولیس اور دیگر ادارے ملکر امن وامان کی بحالی میں اپنا بھر پور کردار ادا کررہے ہیں۔ وفاق کوئلے اور گیس سے بجلی پیدا کرنا چاہتی ہے جو مہنگی ترین ہوگی اس کا غریب عوام اور ملک کو کوئی فائدہ نہیں میں اب کہتا ہوں کہ اگر اس ملک کیلئے کام کرنا ہے تو سستی بجلی ہائیڈرل یعنی پانی سے بنائی جاسکتی ہے پرویز خٹک نے کہا کہ صوبے کی پسماندگی، اضافی پانی اور حقوق اور بے روزگاری کے خاتمے اور صنعتی بستیاں قائم کرنے کیلئے وفاقی حکومت کیساتھ ہر فورم پر مسئلہ اٹھایا ہے لیکن افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ ہمیں صرف طفل تسلیاں دی جارہی ہے وزیر اعظم نواز شریف چاروں صوبوں بشمول ازاد کشمیر اور گلگت بلتقسان پر یکساں توجہ دیں تاکہ ان علاقوں کے غریب عوام کا استحصال اور محرومیاں ختم ہو اور ان کو ان کا حق ملے اس سے وفاق پاکستان مضبوط ہوگا انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخواہ جو کہ دہشت گردی کیخلاف جنگ میں فرنٹ لائن پر ہے اور یہاں کے عوام اور اداروں نے بہت بڑی قربانی دی ہے اور دے رہے ہے اس لئے وفاق کو اس صوبے کے عوام پر خصوصی نظر رکھنی ہو گی پرویز خٹک نے گل ڈھیری ڈیم اور اس پر ہونے والے کام کا جائزہ بھی لیا اور محکمے کو ہدایت کی کہ اس پر کام میں تیزی لائی جائی اور رابطہ سڑکوں پرکام تیزی کرنی کی ہدایت کی مناہی میں مڈل سکول کا بھی اعلان کیا وزیراعلی پرویز خٹک نے افسر خان کی اعشائیہ میں بھی شرکت کی اس سے پہلے ارمر کالونی میں کسٹم سپرنٹنڈنٹ عزیز الرحمان کی والدہ کی وفات پر ان سے تعزیت کی اور کافی دیر تک ان کیساتھ بھیٹے رہے اور مرحومہ کی روح کی ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی اس سے قبل مانکی شریف میں ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر عمران خٹک اور عبدالرحمان خٹک کے والد اور وزیر اعلی کے بہنوئی اور چچا زاد بھائی عبدالطیف کے دعائیہ تقریب منعقد کی گئی جس میں وزیراعلی پرویز خٹک اور صوبائی وزراء رکن قومی اسمبلی اور ناظمین نے شرکت کی اس موقع پر سجادہ نشین پیر اف مانکی شریف پیرشمس الامین نے خصوصی دعا کی ۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -