پنجاب میں بلدیاتی الیکشن کیخلاف رٹوں کے باعث امیدوار مایوس

پنجاب میں بلدیاتی الیکشن کیخلاف رٹوں کے باعث امیدوار مایوس

  

لاہور( شہزاد ملک ) محرم الحرام کی وجہ سے اسلام آباد اور لاہور ہائی کورٹس میں بلدیاتی انتخابات کی تاریخ 31اکتوبر کی بجائے کچھ دنوں کے لئے آگے بڑھانے کی تاریخوں کی رٹوں کے بعد اب بلدیاتی الیکشن لڑنے والے امیدوار بد دلی کے ساتھ اپنی بلدیاتی انتخابات کی مہم میں حصہ لے رہے ہیں اور ان امیدواروں کے اندر یہ چہ مگوئیاں شروع ہو گئی ہیں کہ پتہ نہیں اس ماہ کے آخر 31اکتوبر کو بلدیاتی الیکشن ہونے ہیں یا پھر ایک مرتبہ پھر ان انتخابات کی تاریخ کو کچھ عرصہ کے لئے آگے بڑھا دیا جائے گا ۔تفصیلات کے مطابق جس دن سے عدالتوں میں بلدیاتی انتخابات کو محرم الحرام کی وجہ سے آگے بڑھانے کی درخواستیں دائر کی گئی ہیں اس دن سے ہی بلدیاتی الیکشن لڑنے والے امیدواروں نے میڈیا سے تعلق رکھنے والے افراد سے یہ معلومات حاصل کرنا شروع کردی ہے کہ کیا وا قعی 31اکتوبر تک بلدیاتی انتخابات کا انعقاد ہو جائے گا یا پھر ایک مرتبہ پھر اس مہم کو آگے بڑھا دیا جائے گا ۔’’روز نامہ پاکستان‘‘ کے یونین کونسلوں میں الیکشن لڑنے والے امیدواروں کی جانب سے اس بات پر تشویش پائی جاتی ہے کہ ہماری انتخابی مہم کا مستقبل کیا ہو گا اور کیا مقررہ تاریخ تک انتخابات ہوں گے یا پھر ایک مرتبہ پھر انتخابات کی تاریخ کو آگے بڑھا دیا جائے گا اگر تو حکومت نے تاریخ کوآگے بڑھانے کا کوئی فیصلہ کر لیا ہے تو اس کے بارے میں میڈیا کے زریعے ہمیں بتا دیا جائے تاکہ ہم اسی حساب سے اپنی انتخابی مہم کو چلائیں کیونکہ ہر مرتبہ تاریخیں آگے بڑھ جانے سے انتخابی اخراجات میں بہت بڑا اضافہ ہو چکا ہے اور اس طرح سے ووٹرز کی بھی عدم دلچسپی سامنے آنا شروع ہو جاتی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -